یوپی کے 75 فیصد عوام نان ویج کھاتے ہیں ، مگر ان کیلئے گوشت کا کوئی انتظام نہیں : الہ آباد ہائی کورٹ 

Nov 15, 2017 08:53 PM IST | Updated on: Nov 15, 2017 08:53 PM IST

الہ آباد : اترپردیش میں مذبح اور گوشت کی دوکانیںکھولے جانے کا مطالبہ کرنے والی عرضی پر بدھ کو الہ آباد ہائی میں سماعت ہوئی ۔ معاملہ کی سماعت کرتے ہوئے ہائی کورٹ نے کہا کہ ریاستی حکومت کو 12 مئی کے ہائی کورٹ کے حکم پر عمل کرنا چاہئے تھا۔ ہائی کورٹ نے ریاست کے عوام کو بڑا صابر قرار دیتے ہوئے کہا کہ ریاست کے 75 فیصد عوام نان ویج کھاتے ہیں ، لیکن عوام کیلئے گوشت کا کوئی انتظام نہیں ہے۔

ایڈیشنل ایڈوکیٹ منیش گویل نے عدالت سے 28 نومبر تک کا وقت مانگا ہے ۔ گوئل نے کورٹ کے حکم پر عمل آوری سے متعلق حکومت کا جواب داخل کرنے کیلئے مہلت چاہی ہے ۔ خیال رہے کہ اس معاملہ میں الہ آباد ہائی کورٹ اور لکھنو بینچ میں مجموعی طور پر 37 عرضیاں داخل ہیں ۔ سبھی عرضیوں پر چیف جسٹس بی ڈی بھونسلے کی سربراہی والی بینچ ایک ساتھ سماعت کررہی ہے۔

یوپی کے 75 فیصد عوام نان ویج کھاتے ہیں ، مگر ان کیلئے گوشت کا کوئی انتظام نہیں : الہ آباد ہائی کورٹ 

الہ آباد ہائی کورٹ: فائل فوٹو۔

قابل ذکر ہے کہ الہ آباد ہائی کورٹ نے 12 مئی 2017 کے اپنے حکم میں ریاست کے ہر ضلع میں سلاٹر ہاوس کھولے جانے کا حکم دیا تھا ۔ اس کے ساتھ ہی سلاٹر ہاوس کے ماڈرنائزیشن کیلئے ریاستی حکومت کو بجٹ مہیا کرانے کی بھی ہدایت دی تھی۔

متعلقہ اسٹوریز

ری کمنڈیڈ اسٹوریز