آروشی۔ ہیمراج قتل معاملہ: تلوار جوڑے کی عرضی پر ہائی کورٹ آج سنا سکتا ہے فیصلہ

Oct 12, 2017 02:55 PM IST | Updated on: Oct 12, 2017 02:57 PM IST

نئی دہلی۔ نوئیڈا کے مشہور آروشی۔ ہیمراج قتل معاملہ میں جمعرات کو الہ آباد ہائی کورٹ فیصلہ سنا سکتا ہے۔ اس قتل واقعہ میں عمر قید کی سزا کاٹ رہے آروشی کے والد ڈاکٹر راجیش تلوار اور ماں ڈاکٹر نوپور تلوار کی طرف سے داخل عرضی پر ہائی کورٹ نے 7 اکتوبر کو سماعت مکمل کرتے ہوئے فیصلہ محفوظ رکھ لیا تھا۔

غازی آباد کی سی بی آئی کورٹ نے اس پر اسرار قتل میں آروشی کے والدین کو قصوروار مانتے ہوئے عمر قید کی سزا سنائی تھی۔ اس فیصلہ کو ہائی کورٹ میں تلوار جوڑے نے چیلینج کیا تھا۔

آروشی۔ ہیمراج قتل معاملہ: تلوار جوڑے کی عرضی پر ہائی کورٹ آج سنا سکتا ہے فیصلہ

آروشی کے والد ڈاکٹر راجیش تلوار اور ماں ڈاکٹر نوپور تلوار: فائل فوٹو۔

کب۔ کب کیا ہوا؟

آروشی اور ہیمراج کا قتل 15 مئی 2008 کی رات نوئیڈا کے سیکٹر -25 جل وایو وہار واقع گھر میں ہوا تھا۔ 16 مئی کی صبح آروشی کی خون سے لت پت لاش اس کے کمرے میں بستر پر ملی تھی۔ تلوار جوڑے نے اس قتل کا الزام اپنے نوکر ہیمراج پر لگایا تھا۔

معاملہ میں 17 مئی کی صبح اس وقت نیا موڑ آ گیا جب ہیمراج کی بھی خون سے لت پت لاش تلوار جوڑے کے فلیٹ کی چھت سے برآمد ہو گئی۔ قتل واقعہ میں نوئیڈا پولیس نے 23 مئی کو ڈاکٹر راجیش تلوار کو بیٹی آروشی اور نوکر ہیمراج کے قتل کے الزام میں گرفتار کر لیا تھا۔

یکم جون کو اس معاملے کی تحقیقات سی بی آئی کو منتقل کردی گئی تھی۔ 9 فروری کو سی بی آئی نے تلوار جوڑے کے خلاف قتل کا کیس درج کیا۔ سی بی آئی کی جانچ کی بنیاد پر غازی آباد سی بی آئی کورٹ نے 26 نومبر 2013 کو قتل اور ثبوت مٹانے کا قصوروار مانتے ہوئے عمر قید کی سزا سنائی تھی۔ اس کے بعد سے تلوار جوڑے جیل میں بند ہیں۔

متعلقہ اسٹوریز

ری کمنڈیڈ اسٹوریز