الہ آباد ہائی کورٹ نے کیرانہ میں ہندوؤں کو پھر سے بسانے کا دیا حکم

Feb 06, 2017 06:59 PM IST | Updated on: Feb 06, 2017 06:59 PM IST

الہ آباد ۔ یوپی کےمسلم اکثریتی  کیرانہ علاقے میں ہندوؤں کی مبینہ نقل مکانی کے معاملے میں الہ آباد ہائی کورٹ نے ایک بڑا فیصلہ دیا ہے ۔ الہ آباد ہائی کورٹ نے ریاستی حکومت کو حکم دیا ہے کہ کیرانہ سے نقل مکانی کرنے والے ہندوؤں کی حفاظت اور ان کو پھر سے کیرانہ میں بسانے کا بندو بست کیا جائے ۔ ہائی کورٹ نے یہ بھی کہا ہے کہ ریاستی حکومت کیرانہ سے نقل مکانی کرنے والے ہندوؤں کے بلا خوف  ووٹ ڈالنےکےحق کو یقینی بنائےے اور ان کو مکمل  سکیورٹی فراہم کی جائے ۔ کیرانہ معاملے کی جانچ سی بی آئی سے کرانے کے معاملے میں ہائی کورٹ نے ریاستی حکومت سے چھ ہفتے کے اندر جواب  بھی طلب کر لیا ہے ۔

واضح رہے کہ عرضی گزار لوکیش کھرانا کی  دوعرضیوں پر الہ آباد ہائی کورٹ نے یہ فیصلہ دیا ہے ۔ دونوں عرضیوں میں کہا گیا تھا کہ کیرانہ میں مسلمانوں کے خوف کی وجہ سے وہاں کی ہندو آبادی نقل مکانی کرنے پر مجبور ہے جبکہ ریاستی حکومت اس معاملے میں ہندوؤں کی کوئی مدد نہیں کر رہی ہے۔

الہ آباد ہائی کورٹ نے کیرانہ میں ہندوؤں کو پھر سے بسانے کا دیا حکم

متعلقہ اسٹوریز

ری کمنڈیڈ اسٹوریز