الہ آبادہائی کورٹ کا یوگی حکومت سے سوال ، غیر قانونی سلاٹر ہاؤس کا بند ہونا مناسب ، لیکن قانونا رجسٹرڈ سلاٹر ہاؤس کیلئے جگہ کا بندوبست کیوں نہیں

Jul 05, 2017 12:01 PM IST | Updated on: Jul 05, 2017 12:01 PM IST

الہ آباد: الہ آباد ہائی کورٹ نے ریاست کے وزیر اعلی یوگی آدتیہ ناتھ کے اپنے ہی شہر گورکھپور میں مذبح(سلاٹر ہاؤس) نہ ہونے کے سلسلے میں دائر کی گئی ایک درخواست پر سٹی کمشنر کو طلب کیا ہے۔ عدالت کا کہنا ہے کہ غیر قانونی سلاٹر ہاؤس کا بند ہونا مناسب ہے لیکن قانونی طورپر رجسٹرڈ سلاٹر ہاؤس کے لئے جگہ کا بندوبست کیوں نہیں ہے؟

چیف جسٹس ڈی بی بھوسلے اور جسٹس ایم کے گپتا نے مذکورہ حکم گزشتہ روز گورکھپور کے دلشاد احمد اور 120 دیگر عرضی دہندگان کی جانب سے داخل درخواستوں پر سماعت کے دوران دیا ہے ۔ درخواست میں کہا گیا ہے کہ گورکھپور میں سلاٹر ہاؤس نہیں ہے اور وہاں جگہ نہ ہونے کی وجہ سے کسی کو سلاٹر ہاؤس کا لائسنس نہیں دیا جا رہا ہے۔ درخواست میں کہا گیا کہ اپنی پسند کے کھانے کا سب کو حق ہے لیکن سلاٹر ہاؤس نہ ہونے کے سبب ایسا ممکن نہیں ہو پا رہا ہے۔

الہ آبادہائی کورٹ کا یوگی حکومت سے سوال ، غیر قانونی سلاٹر ہاؤس کا بند ہونا مناسب ، لیکن قانونا رجسٹرڈ سلاٹر ہاؤس کیلئے جگہ کا بندوبست کیوں نہیں

ہائی کورٹ نے سٹی کمشنر کو جمعہ کے 7 جولائی کو عدالت میں طلب کرکے جواب داخل کرنے کو کہا ہے کہ وہ بتائے کہ گورکھپور میں ماڈرن سلاٹر ہاؤس کھولنے میں کیا پریشانی ہے؟

متعلقہ اسٹوریز

ری کمنڈیڈ اسٹوریز