جے پی انفرا ٹیک دیوالیہ قرار ، مکان اور فلیٹ خریدنے والے ہزاروں لوگوں کی مشکلات میں اضافہ

Aug 10, 2017 08:03 PM IST | Updated on: Aug 10, 2017 08:06 PM IST

نئی دہلی : رئیل اسٹیٹ کی معروف کمپنی جے پی انفرا ٹیک کو دیوالیہ قرار دیدیا گیا ہے۔ نیشنل کمپنی لاء ٹربيونل (این سی ایل ٹی ) نے بلڈر کو دیوالیہ قرار دیا ہے۔ معلومات کے مطابق جے پی بلڈر پر 8365 کروڑ روپے کا قرض ہے۔ این سی ایل ٹی نے جے پی بلڈر کو 270 دنوں کا وقت دیا ہے۔ اگر اگلے 9 ماہ میں اس کے حالات بہتر نہیں ہوئے تو جائیداد بھی نیلام کردی جائے گی۔

اس کے بعد سے اتر پردیش میں جے پی بلڈر سے مکان اور فلیٹ خریدنے والے ہزاروں لوگوں کی مشکلیں بڑھ گئی ہیں۔ نوئیڈا، گریٹر نوئیڈا میں جے پی کے کئی منصوبے زیر تعمیر ہیں۔ ایک اندازے کے مطابق جے پی بلڈر کے تقریبا 32 ہزار فلیٹ زیر تعمیر ہیں۔

جے پی انفرا ٹیک دیوالیہ قرار ، مکان اور فلیٹ خریدنے والے ہزاروں لوگوں کی مشکلات میں اضافہ

خیال رہے کہ کچھ وقت پہلے ہی ریزرو بینک آف انڈیا نے بینکوں کے این پی اے کو کم کرنے کی سمت میں کارروائی کرتے ہوئے 12 ڈیفالٹرس کی شناخت کی تھی۔ ان 12 اکاونٹ ہولڈروں پر بینکوں کا تقریبا 5000 کروڑ روپے سے بھی زیادہ بقایا تھا ۔ کل این پی اے کے 25 فیصد ان 12 اکاونٹ ہولڈروں کے نام پر تھا ۔ انہی 12 اکاونٹ ہولڈروں میں سے جے پی انفرا ٹیک بھی ایک ہے۔ آر بی آئی نے بینکوں کو ان 12 اکاونٹ ہولڈروں کے خلاف سخت کارروائی کرنے کا حکم دے دیا تھا۔ بینکوں کی جانب سے ان کے خلاف آئی بی سی کے تحت کارروائی بھی شروع کر دی گئی ہے۔

متعلقہ اسٹوریز

ری کمنڈیڈ اسٹوریز