عام آدمی پارٹی کے ممبر اسمبلی امانت اللہ خان نے کانگریس کارکنان پر لگایا فائرنگ کا الزام

Apr 19, 2017 10:58 PM IST | Updated on: Apr 19, 2017 10:58 PM IST

نئی دہلی : عام آدمی پارٹی کے اوکھلا سے رکن اسمبلی امانت اللہ خان نے الزام لگایا ہے کہ کانگریس کے کچھ کارکنوں نے ان پر گولی چلائی ہے۔ خان کا الزام ہے کہ منگل کی رات میں جنوب مشرقی دہلی کے جامعہ نگر علاقے میں کارپوریشن انتخابی مہم کے دوران کانگریس کارکنوں نے انہیں نشانہ بناتے ہوئے مبینہ طور پر فائرنگ کی۔

اس دوران دہلی پولیس نے خان کی جانب سے اس طرح کی کوئی شکایت نہیں ملنے کی بات کہی ہے۔ لہذا اس معاملہ میں پولیس کی طرف سے کوئی ایف آئی آر درج نہیں کی گئی ہے۔ تاہم پولیس نے واقعہ کی اطلاع دینے کے لئے کی گئی پی سی آر کال کی بنیاد پر واقعہ کی جانچ شروع کر دی ہے۔ جنوب مشرقی ضلع کے ڈپٹی کمشنر رومل بانيا نے بتایا کہ پولیس علاقہ میں سی سی ٹی وی کیمروں کے فوٹیج کھنگال رہی ہے ، جس سے ان کے الزامات کی تصدیق ہو سکے۔

عام آدمی پارٹی کے ممبر اسمبلی امانت اللہ خان نے کانگریس کارکنان پر لگایا فائرنگ کا الزام

انہوں نے بتایا کہ پولیس کو رات 12 بج کر 10 منٹ پر کی گئی پی سی آر کال میں بٹلہ ہاؤس چوک پر کانگریس اور عام آدمی پارٹی کے کارکنوں کے درمیان جھڑپ کی اطلاع ملی تھی ۔ بٹلہ ہاؤس چوک پر ہی دونوں پارٹیوں کے دفتر بھی ہیں۔ بانيا نے بتایا کہ موقع پر پہنچی پولیس ٹیم کو عینی شاہدین نے بتایا کہ دونوں جماعتوں کے کارکنوں کے درمیان تنازع اس وقت بڑھ گیا ، جب جامعہ نگر علاقہ سے کانگریس کے امیدوار شعیب دانش نے بیچ بچاؤ کی کوشش کی۔

متعلقہ اسٹوریز

ری کمنڈیڈ اسٹوریز