اوکھلا سے ممبر اسمبلی امانت اللہ خان کی عام آدمی پارٹی سے معطلی منسوخ ، کپل مشرا نے سادھا نشانہ

عام آدمی پارٹی نے اوکھلا سے پارٹی کے رکن اسمبلی امانت اللہ خان کی معطلی منسوخ کردی ہے۔

Oct 30, 2017 06:33 PM IST | Updated on: Oct 30, 2017 09:39 PM IST

نئی دہلی : عام آدمی پارٹی نے اوکھلا سے پارٹی کے رکن اسمبلی امانت اللہ خان کی معطلی منسوخ کردی ہے۔  کراول نگر سے پارٹی کے معطل رکن اسمبلی کپل مشرا نے آج کئی ٹوئٹ کرکے مسٹر خان کی معطلی کو منسوخ کئے جانے کو نشانہ بنایا۔ پارٹی کے سینئر لیڈر کمار وشواس پر بھارتیہ جنتا پارٹی (بی جے پی) اور راشٹریہ سویم سیوک سنگھ (آر ایس ایس) کے لئے کام کرنے کا الزام لگانے پر پارٹی کی سیاسی امور کی کمیٹی نے مسٹر خان کو تین مئی کو پارٹی کی ابتدائی رکنیت سے معطل کردیا تھا۔

مسٹر مشرا نے ٹوئٹ میں لکھا کہ کیجریوال کے بارے میں سچ بولو تو سزا، کمار کے بارے میں جھوٹ بولو تو مزہ، کیا امانت کے معاملہ پر بنائی گئی تین رکنی کمیٹی کی رپورٹ عام کی جائے گی۔  ایک دیگر ٹوئٹ میں سابق وزیر نے لکھا کہ آپ کے پاس امانت اللہ سے زیادہ تیز طرار مسلم چہرہ ہے نہیں۔مسلم ووٹ کے بغیر پارٹی کہیں دوسری جگہ تو چھوڑو دہلی میں بھی نہیں جیت سکے گی۔ انہوں نے ایک دیگر ٹوئٹ میں لکھا کہ 67اراکین اسمبلی کے جیتنے کے لئے کسی ذات یا مذہب کے چہرے نہیں چاہئے تھے۔ امانت اللہ ان لوگوں میں سے ہیں جو افضل گرو اور برہان وانی کو ہیرو مانتے ہیں۔ دہلی کے مسلمان ایسے لوگوں کو پسند نہیں کرتے۔

اوکھلا سے ممبر اسمبلی امانت اللہ خان کی عام آدمی پارٹی سے معطلی منسوخ ، کپل مشرا نے سادھا نشانہ

خیال رہے کہ مسٹر مشرا نے وزیراعلی اروند کیجریوال اور وزیر صحت ستیندر جین پر بدعنوانی کے الزام لگائے تھے جس کے بعد انہیں کیجریوال کابینہ سے ہٹا دیا گیا تھا۔

متعلقہ اسٹوریز

ری کمنڈیڈ اسٹوریز