اسمرتی ایرانی کا راہل گاندھی پر جوابی حملہ، آر ایس ایس نے بھی لیا آڑے ہاتھوں

Jan 12, 2017 03:47 PM IST | Updated on: Jan 12, 2017 03:47 PM IST

نئی دہلی۔ بیرون ملک سے لوٹے کانگریس نائب صدر راہل گاندھی کے وزیر اعظم مودی پر حملے کو لے کر بھارتیہ جنتا پارٹی نے جوابی حملہ کیا ہے۔ امیٹھی سے راہل کے خلاف لوک سبھا انتخابات لڑ چکیں مرکزی وزیر اسمرتی ایرانی نے راہل کو جواب دیا ہے۔ اس کے علاوہ بی جے پی ترجمان اور کئی لیڈروں نے بھی راہل پر حملہ بولا ہے۔ وہیں آر ایس ایس نے بھی راہل کو نشانے پر لیا۔

اسمرتی نے کہا کہ کل چند جملے راہل جی نے ملک کے وزیر اعظم کے تناظر میں کہے۔ انتخابات میں کانگریس کی ہار اس بات کا اشارہ ہے کہ عوام مودی میں یقین ظاہر کر چکے ہیں۔ راہل چھٹی سے واپس آنے کے بعد تھوڑا سا منحرف ہوئے ہوں گے۔ مودی کی مقبولیت بڑھ رہی ہے۔ اوچھا تبصرہ کرنا فطری ہے۔ عوام کا تعاون عوام کا اعتماد راہل گاندھی کے لئے سب سے بڑا جواب ہے۔ امیٹھی سے الیکشن لڑ چکی ہوں۔ جس شخص نے 10 سال میں امیٹھی کی ترقی نہیں کی، جنہوں نے پورے ملک کو دنیا میں طاقت کے طور پر پیش کیا ہے، ان پر تبصرہ کر رہا ہے۔ عوام مسلسل اپنی حمایت پی ایم کو دیتی ہے۔

اسمرتی ایرانی کا راہل گاندھی پر جوابی حملہ، آر ایس ایس نے بھی لیا آڑے ہاتھوں

وہیں بی جے پی ترجمان سری کانت شرما نے کہا کہ راہل جھوٹ بولنے کی مشین بن چکے ہیں۔ چھٹی سے آئے ہیں۔ چھٹی شک پیدا کرتی ہے، کہاں گئے تھے؟ کبھی لائن میں لگتے ہیں۔ ملک کا عام آدمی وزیر اعظم کے ساتھ ہے۔

وہیں آر ایس ایس کے راکیش سنہا نے بھی راہل کو آڑے ہاتھوں لیا۔ سنہا نے کہا، ان کی خاندانی سیاست ہے۔ آر ایس ایس کی شراکت داری کو سمجھنے کے لئے راہل کو سیاست کا اے بی سی سمجھنا ہوگا۔ مودی جی نے كانگریس مكت ہندوستان کی بات کہی ہے اس میں بی جے پی سے زیادہ راہل کردار ادا کر رہے ہیں۔ اگلے انتخابات میں کانگریس 44 سے چار پر نہ آ جائے۔

متعلقہ اسٹوریز

ری کمنڈیڈ اسٹوریز