بیٹے کی فرم پر الزامات پرامت شاہ نے توڑی اپنی چپی، کانگریس کو نشانہ بنایا

Oct 13, 2017 09:55 PM IST | Updated on: Oct 13, 2017 09:55 PM IST

نئی دہلی۔ بھارتیہ جنتا پارٹی کے سربراہ امیت شاہ نے اپنے بیٹے جے شاہ کی کمپنی کے ٹرن اوور میں مبینہ طور پر بے تحاشہ اضافے کے بارے میں اپنی خاموشی توڑتے ہوئے کہا ہے کہ الزام لگانے والوں کو چاہئے کہ وہ ثبوتوں کے ساتھ عدالت سے رجوع کریں۔ مسٹر شاہ نے ایک پروگرام میں’ آج تک‘ کو بتایا کہ جے شاہ نے ہتک عزت کا فوجداری مقدمہ کیا ہے اور ایک سول سوٹ بھی دائر کیا ہے۔ جے  خود ہی چھان بین کےلئے ہے اس لئے جو لوگ الزام لگا رہے ہیں۔ اگر ان کے پاس کوئی ثبوت ہو تو وہ اسے لے کر عدالت میں حاضر ہوں۔

بی جے پی کے صدر نے کہا کہ جہاں تک شاہ کی کمپنی ٹمپل انٹرپرائز پرائیویٹ لمٹیڈ کا تعلق ہے اس نے حکومت کے ساتھ نہ تو ایک روپے کا کاروبار کیا ہے اور نہ تو ایک روپے کی زمین لی ہے، نہ ہی حکومت کے ساتھ کوئی کنٹرکٹ کیا ہے اور نہ ہی بوفورس کی طرح سے کسی طرح کے بچولیئے کا کام کیا ہے۔ مسٹر شاہ نے اپنے اور اپنے بیٹے پرحملے کے لئے کانگریس پر سخت نکتہ چینی کی اور الزام لگایا کہ اس پارٹی میں کسی کے خلاف جس نے ماضی میں کانگریس پر بدعنوانی کے الزام لگائےہیں مقدمہ دائر کرنے کی ہمت نہیں ہے۔

بیٹے کی فرم پر الزامات پرامت شاہ نے توڑی اپنی چپی، کانگریس کو نشانہ بنایا

بی جے پی صدر امت شاہ: فائل فوٹو۔

انہوں نے کہا کہ میں ایک سوال پوچھنا چاہتا ہوں کہ وہ یہ کہ کانگریس پر اب تک بے شمار الزامات لگ چکے ہیں جب کہ جے شاہ کے خلاف الزام بدعنوانی کا نہیں ہے لیکن کیا کانگریس نے کسی کے خلاف ہتک عزت کا مقدمہ یا سو کروڑ روپے کا دیوانی مقدمہ دائر کیا ہے۔ مسٹر شاہ نے دریافت کیا کہ ان میں ہمت کیوں نہیں ہے؟

متعلقہ اسٹوریز

ری کمنڈیڈ اسٹوریز