بی جے پی گجرات ماڈل کے ذریعہ یوپی کی بھی سدھارے گی اقتصادی حالت ، اس شعبہ میں بنے گا نمبر ون

Jan 29, 2017 11:11 PM IST | Updated on: Jan 29, 2017 11:17 PM IST

نئی دہلی : اتر پردیش اسمبلی انتخابات کے لیے بی جے پی کی جانب سے جاری کئے گئے منشور میں ریاست کی مالی حالت بہتر بنانے کے لئے بھی ایک فارمولہ پیش کیا گیا ہے۔ پارٹی کا کہنا ہے کہ وہ ٹیکس چوری روک کر ریاست کی اقتصادی حالت کو بہتر بنائے گی۔

نیوز 18 انڈیا کو دیئے خاص انٹرویو میں بی جے پی کے صدر امت شاہ نے یوپی کی اقتصادی حالت بہتر بنانے کے سوال پر کہا کہ اگر رابرٹس گنج اور بندیل کھنڈ کے کانوں میں بڑے پیمانے پر ہونے والی چوری اور نوئیڈا میں جاری ٹیکس چوری پر روک لگا دی جائے، تو اترپردیش کا بجٹ دو گنا ہوجائے گا۔ یہ تجربہ ہم نے دوسری ریاستوں میں بھی کیا ہے۔

بی جے پی گجرات ماڈل کے ذریعہ یوپی کی بھی سدھارے گی اقتصادی حالت ، اس شعبہ میں بنے گا نمبر ون

بی جے پی صدر نے اتر پردیش میں دودھ کی پیداوار کے بے پناہ امکانات کو بھی شیئر کیا۔ انہوں نے کہا کہ میں ایسی ریاست سے آتا ہوں، جہاں یوپی کے مقابلہ میں بارش کم ہوتی ہے، ساتھ ہی ساتھ پانی کی بھی کمی رہتی ہے، اس کے باوجود وہاں ڈیريوں کے ذریعے دودھ کی پیداوار کے ریکارڈ قائم ہوئے ہیں۔ ایسے میں ہم چاہتے ہیں کہ جانوروں کو بچایا جائے۔

گئو کشی پر پابندی کے سوال پر امت شاہ نے اسے مذبح پر روک سے جوڑنے سے انکار کیا۔ بی جے پی صدر نے کہا کہ مذبح پر روک کی بات کو اس نقطہ نظر سے نہیں دیکھا جانا چاہئے۔

امت شاہ نے کہا کہ آپ مشرقی اور مغربی اتر پردیش، روہیل کھنڈ یا بندیل کھنڈ کہیں بھی جائیں، وہاں آپ دیکھیں گے کہ مذبح کے چلتے دودھ دینے والے سبھی جانور ختم ہو گئے ہیں۔ کبھی بھی قحط پڑتا ہے، یا خشک سالی آتی ہے ، تو غریب کسان مشکل میں پڑ جاتے ہیں۔ کسان دن بہ دن غریب ہوتے جا رہے ہیں، اگر ان کے پاس دودھ دینے والے دو تین جانور ہوں گے ، تو وہ اپنی روزی روٹی آسانی سے چلا پائیں گے۔

متعلقہ اسٹوریز

ری کمنڈیڈ اسٹوریز