اتر پردیش 'قصاب 'کی بیماری سے پریشان، اسے ختم کرنا ہوگا: امت شاہ

Feb 22, 2017 07:35 PM IST | Updated on: Feb 22, 2017 07:35 PM IST

اعظم گڑھ : بھارتیہ جنتاپارٹی (بی جے پی) صدر امت شاہ نے سماجوادی پارٹی صدر اکھلیش یادو اور بہوجن سماج پارٹی سربراہ مایاوتی پر الزام لگاتے ہوئے کہا کہ پھوپی اور بھتیجے نے پچھلے 15 سال میں ریاست کو برباد کردیا جس کی وجہ سے ریاست ترقی کی دوڑ میں میلوں پیچھے رہ گئی ہے۔ مسٹر شاہ نے آج یہاں اترولیا اسمبلی حلقے میں انتخابی جلسہ سے خطاب کرتے ہوئے کہا کہ پھوپی (مایاوتی) اور بھتیجے (اکھلیش یادو) نے برباد کرکے چھوڑا ہے۔ دونوں پارٹیوں نے پچھلے 15 سال کے دوران لوٹنے کا کام کیا ہے ۔ ریاست دوسری ریاستوں کے مقابلے پچھڑ گئی ہے۔ صوبہ میں عوام اب ان کی سرکاروں سے عاجز آچکے ہیں اور تبدیلی چاہتے ہیں۔

انہوں نے دعوی کیا کہ ریاست میں بی جے پی کی لہر چل رہی ہے۔ اس مرتبہ ریاست میں پارٹی دو تہائی اکثریت کے ساتھ سرکار بنارہی ہے۔ وزیر اعلی کہتے ہیں کہ کام بولتا ہے لیکن ریاست میں کام تو کہیں نظر نہیں آرہا۔ ریاست قتل، عصمت داری، لوٹ، اقدام قتل اور غنڈہ گردی میں اول نمبر پر ہے۔ سماجوادی کانگریس اتحاد پر طنز کرتے ہوئے انہوں نے کہا کہ اب تو صاحبزادے اکٹھے ہوگئے ہیں۔ ایک سے باپ پریشان ہے ایک سے ماں اور دونوں سے اترپردیش دکھی ہے۔ ریاست کی ترقی کا سارا پیسہ پھوپی بھتیجہ اور چاچا کھا گئے۔

اتر پردیش 'قصاب 'کی بیماری سے پریشان، اسے ختم کرنا ہوگا: امت شاہ

مسٹر شاہ نے کہا کہ ایک قصاب تھا جسے ساری دنیا جانتی تھی۔ اب کساب کا معنی اترپردیش میں دوسرا ہوگیا ہے ک کا مطلب کانگریس ، س کا مطلب سماجوادی اورب کا مطلب بہوجن سماج۔ ریاست کو اسی کساب (قصاب) سے آزادی دلانی ہوگی۔ بی جے پی صدر نے کہا کہ ایس پی۔ بی ایس پی ترقی نہیں کرسکتی۔ کانگریس پر طنز کرتے ہوئے انہوں نے کہا کہ ’’راہل بابا آپ ہم سے سوال پوچھ رہے ہیں۔ اعظم گڑھ والے آپ سے سوال پوچھ رہے ہیں اور 60 سال کا جواب دو۔ ہم جب آئیں گے تو پورا حساب لے کر آئیں گے آپ کو پوچھنا نہیں پڑے گا۔

انہوں نے کہا کہ مرکزی سرکار نے 40 ہزار سے زیادہ عورتوں کے گھر میں گیس کا چولہا پہنچا دیا ہے۔ نریندر مودی ڈھائی سال میں 93 منصوبے لائے ہیں۔ لکھنؤ کی سرکار اسے لاگو نہیں کرپائی۔ ریاستی منصوبے بجلی کی طرح آگے نہیں بڑھتے ہیں۔ اچھے دن 11 مارچ سے شروع ہوں گے۔

متعلقہ اسٹوریز

ری کمنڈیڈ اسٹوریز