کشمیر: علی گڑھ مسلم یونیورسٹی سے پی ایچ ڈی کر رہا طالب علم حزب المجاہدین میں شامل

جموں و کشمیر میں ایک پی ایچ ڈی اسکالر کے حزب المجاہدین میں شامل ہونے کی خبرسامنے آئی ہے۔ یہ پی ایچ ڈی اسکالر علی گڑھ مسلم یونیورسٹی میں ریسرچ کر رہا تھا۔

Jan 08, 2018 12:35 PM IST | Updated on: Jan 08, 2018 12:35 PM IST

سری نگر۔ جموں و کشمیر میں ایک پی ایچ ڈی اسکالر کے حزب المجاہدین میں شامل ہونے کی خبرسامنے آئی ہے۔ یہ پی ایچ ڈی اسکالر علی گڑھ مسلم یونیورسٹی میں ریسرچ کر رہا تھا۔ اب جموں و کشمیر میں سوشل میڈیا پر اس کی اے کے -47 لئے ایک تصویر سامنے آئی ہے۔ مقامی میڈیا نے سرکاری ذرائع کے حوالہ سے لکھا ہے کہ پی ایچ ڈی اسکالر کا نام منان وانی ہے اور وہ کپواڑہ ضلع کے لولاب کے تاکپپورہ گاؤں کا رہنے والا ہے۔ وہ جیولوجی میں پی ایچ ڈی کر رہا تھا۔ 26 سالہ وانی تین روز قبل اپنے گھر آنے والا تھا۔ لیکن اس نے گھر پر کوئی خبر نہیں دی۔

رپورٹ کے مطابق، وہ پانچ سال سے اے ایم یو میں رہ رہا تھا اور وہیں سے اس نے ایم فل کی ڈگری لی تھی۔ دو دن پہلے فیس بک پر اس کی تصویر سامنے آئی۔ اس میں اس کے ہاتھ میں اے کے -47 رائفل تھی اور کہا گیا کہ وہ پانچ جنوری کو حزب المجاہدین میں شامل ہو گیا۔ ایک پولیس افسر نے بتایا کہ اتوار کو اس کے اہل خانہ کی جانب سے گمشدگی کی رپورٹ درج کرائی گئی ہے۔ اس کے بعد پولیس نے کارروائی شروع کر دی ہے۔ پولیس نے کہا کہ جانچ کی جا رہی ہے کہ کیسے اس نے پی ایچ ڈی کی تحقیقات کو چھوڑ کر دہشت گردی کے راستہ کو اختیار کر لیا۔

کشمیر: علی گڑھ مسلم یونیورسٹی سے پی ایچ ڈی کر رہا طالب علم حزب المجاہدین میں شامل

پی ایچ ڈی اسکالر کا نام منان وانی ہے اور وہ کپواڑہ ضلع کے لولاب کے تاکپپورہ گاؤں کا رہنے والا ہے۔

Loading...

خبروں میں بتایا گیا ہے کہ منان کا خاندان بہت خوشحال ہے۔ اس کے والد لیکچرر ہیں اور بھائی ایک جونیئر انجنیئر ہے۔ وانی نے لولاب میں 10 ویں تک کی تعلیم جواہر نوودے ودیالیہ سے حاصل کی تھی۔

Loading...

متعلقہ اسٹوریز

ری کمنڈیڈ اسٹوریز