سینئر خاتون صحافی گوری لنکیش کو اے ایم یو کے اساتذہ اور طلبہ نے پیش کیا خراج عقیدت

Sep 10, 2017 08:32 PM IST | Updated on: Sep 10, 2017 08:32 PM IST

علی گڑھ : ملک کی معروف صحافی و سوشل ایکٹوسٹ گوری لنکیش کے قتل کے بعدجہاں ان کو خراج عقیدت پیش کر کے ملک کے نظام پر سوال اُٹھائے جا رہے ہیں۔ وہیں ملک بھر میں ایک تحریک پیدا ہوگئی ہے ، جس کے تحت آج علی گڑھ مسلم یونیورسٹی میں بھی طلبہ و اساتذہ کے ایک گروپ نے گوری لنکیش کو خراج عقیدت پیش کرتے ہوئے حالات حاضرہ میں انصاف کی آواز کو نہ دبنے دینا کے عزم کا اظہار کیا ۔ اساتذہ اور طلبہ مسلم یونیورسٹی کا کہنا ہے کہ اگر اسی طرح سے حق کی آواز کو دبایا گیا اور لوگ خاموش تماشائی بنے رہے ، تو وہ دن دور نہیں جب حق بات کہنے سے لوگ ڈریں گے۔

سینئر صحافی گوری لنکیش کے قتل کے بعد جگہ جگہ مظاہرے کر کے نظم ونسق پر سوالات اُٹھائے جارہے ہیں، وہیں حق پرستی پر چل کر انصاف کی بات کرنے والوں کی آواز کو دبانے کا یہ کوئی پہلا واقعہ نہیں ہے ۔بلکہ متعدد مرتبہ اس طرح کے واقعات دیکھنے کو ملے ہیں ۔ اب مسلم یونیورسٹی میں اساتذہ اور طلبہ نے اس آواز کو نہ دبنے دینے کا عزم ظاہر کیا ہے۔ ان کا کہنا ہے کہ ڈر کی سیاست کو اب ختم کرنا ہوگا ۔ ہمارا حکومت وقت سے مطالبہ ہے ایسے واقعات پر فوری روک لگائی جائے اور انصاف کا خون کرنے والوں کے خلاف سخت کاروائی کی جائے۔

سینئر خاتون صحافی گوری لنکیش کو اے ایم یو کے اساتذہ اور طلبہ نے پیش کیا خراج عقیدت

متعلقہ اسٹوریز

ری کمنڈیڈ اسٹوریز