اے ایم یو میں طلباء یونین کا الیکشن کرائے جانے کو لیکر طلباء نے دیا دھرنا

Sep 20, 2017 08:00 PM IST | Updated on: Sep 20, 2017 08:00 PM IST

علی گڑھ ۔ ملک کے کئی اہم اداروں میں طلباء یونین انتخابات ہونے کے بعد اب علی گڑھ مسلم یونیورسٹی میں طلباء یونین کے انتخاب کرائے جانے کو لیکر طلباء کی تحریک زور پکڑتی جا رہی ہے۔ جہاں گذشتہ دنوں انھوں نے ایک عرضداشت ضلع انتظامیہ کے نام پیش کرکے جلد ہی الیکشن کرانے کا مطالبہ کیا تھا وہیں گذشتہ روزایک نمائندہ گروپ نے ضلع انتظامیہ کو عرضداشت پیش کرتے ہوئے 24 گھنٹہ میں طلباء یونین انتخابات کے اعلان کا الٹی میٹم دیا تھا ۔  طلبا نے کہا تھا کہ اگر انتظامیہ ایسا نہیں کریگی تو طلباء انکے اس رویہ کے خلاف احتجاجی دھرنا دینے پر مجبورہونگے۔

طلباء کے ذریعہ یونین انتخابات کرائے جانے کولیکر دیئے گئے 24 گھنٹہ کے الٹی میٹم کے بعد آج طلباء نے وائس چانسلر لاج پراحتجاجی مظاہرہ شروع کردیا اوریونین انتخاب کرائے جانے کے مطالبہ کو دوہرایا ۔ اس موقع پرجم کر یونیورسٹی انتظامیہ کے خلاف نعرے بازی کی گئی ۔ وہیں یونیورسٹی انتظامیہ نے طلباء کے وقت پر الیکشن کرانے سے صاف انکار کردیا ہے ۔ طلباء کا مطالبہ ہے کہ یونیورسٹی انتظامیہ سرسید احمد خاں کی 200 ویں یومِ پیدائش سے قبل طلباء یونین کے انتخابات کو یقینی بنائے تاکہ سرسید ڈے پر ہونے والی پروقارتقریبات میں طلباء کی نمائندگی طلباء یونین کرے۔

اے ایم یو میں طلباء یونین کا الیکشن کرائے جانے کو لیکر طلباء نے دیا دھرنا

طلباء کے ذریعہ وائس چانسلر کی رہائش گاہ پرشروع کئے گئے مظاہرہ کے بعد طلباء سے بات کرنے کے لئے پراکٹر پروفیسرمحمد محسن خاں اپنی ٹیم کے ساتھ پہنچے ۔ انھوں نے طلباء لیڈران کو سمجھانے کی کوشش کی کہ فی الحال یونیورسٹی میں تعلیمی سرگرمیاں جاری ہیں۔ ایسے میں کسی بھی طرح کے الیکشن سے تعلیمی سرگرمیاں متاثر ہونگی۔ وہیں یونیورسٹی پراکٹر نے یہ بھی واضح کیا کہ سرسید ڈے سے قبل کسی بھی قیمت پر الیکشن نہیں کرائے جائیں گے۔

متعلقہ اسٹوریز

ری کمنڈیڈ اسٹوریز