سری نگر میں انجمن اوقاف جامع مسجد کا اجلاس ، نماز جمعہ کی ادائیگی پر مسلسل قدغن پر برہمی کا اظہار

Nov 02, 2017 07:26 PM IST | Updated on: Nov 02, 2017 07:26 PM IST

سری نگر: انجمن اوقاف جامع مسجد سری نگر نے جمعرات کو یہاں منعقدہ ایک اہم اجلاس میں ریاستی انتظامیہ کی جانب سے گزشتہ پانچ جمعہ سے مرکزی جامع مسجد سری نگر کو کرفیو جیسی پابندیوں کے ذریعے بند رکھنے ، شہر و گام سے آنے والے نمازیوں اور زائرین پر قدغن لگانے اور میرواعظ کشمیر کوخانہ نظر بند رکھ کر نماز جمعہ کی ادائیگی کے ساتھ ساتھ منصبی ذمہ داریوں سے روکنے کی پالیسیوں پر گہری فکر و تشویش کا اظہار کرتے ہوئے ان حربوں کی شدید مذمت کی گئی۔ انجمن اوقاف کے سربراہ میرواعظ مولوی عمر فاروق کی صدارت میں منعقد ہونے والے اس اجلاس میں انجمن کے اراکین اور عہدیداروں کے علاوہ جامع مارکیٹ کے ذمہ داران اور عہدیداران نے بھی شرکت کی ہے۔

یہاں جاری ایک بیان کے مطابق اجلاس میں کشمیر کے سب سے بڑے دینی و روحانی مرکز اور عظیم عبادت گاہ جامع مسجد کی صفائی ، ستھرائی اور گردو پیش کے ماحول کو پاک و صاف رکھنے اور دیگر ضمنی و ذیلی انتظامات کا جائزہ لیا گیا۔ اس مرحلے پر میرواعظ نے اوقاف کے اراکین اور عہدیداروں کو تلقین کی کہ وہ مرکزی جامع مسجد کی عظمت رفتہ کو بحال رکھنے اور اس کے تقدس اور اہمیت کو فروغ دینے کے لئے اپنی ذمہ داریوں کو احسن طریقے سے انجام دینے کے لئے اپنے اپنے فرائض بخوبی انجام دیں تاکہ زائرین اور نمازیوں کو کسی قسم کی دقت اور پریشانی کا سامنا نہ کرنا پڑے۔

سری نگر میں انجمن اوقاف جامع مسجد کا اجلاس ، نماز جمعہ کی ادائیگی پر مسلسل قدغن پر برہمی کا اظہار

اجلاس میں زرعی یونیورسٹی سری نگر کے ماہرین کا وفد جس میں ڈاکٹر عبدالرؤف وانی، ڈاکٹر ابو منظر، ڈاکٹر نثار احمد اور ڈاکٹر اے آر ملک کی رپورٹ جو انہوں نے جامع مسجد کے نایاب ستونوں کا معائنہ کرکے انہیں مستقبل میں خراب ہونے سے محفوظ رکھنے کے لئے انجمن اوقاف کو پیش کی ہے اس پر عمل درآمد کے لئے غور و خوض کیا گیا اور میرواعظ نے اس ضمن میں مناسب اقدامات اٹھانے کی انجمن اوقاف کے ذمہ داروں کو ہدایت دی۔ اجلاس میں انجمن اوقاف کے آمد و خرچ کے حسابات کا حسب معمول ہر سال آڈٹ کیا جاتا ہے چنانچہ اس ضمن میں سال رواں کے حسابات کے ذیل میں چارٹرڈ اکاونٹنٹ کی ابتدائی رپورٹ بھی زیر غور لائی گئی جسے مکمل ہونے کے بعد عوام کی معلومات کے لئے باضابطہ مشتہر کیا جائے گا۔

اجلاس میں یہ بات واضح کی گئی ہے مرکزی جامع مسجد کی دیکھ ریکھ ، انتظام و انصرام اور اندرونی محاذ پر جملہ معاملات کے اخراجات و مصارف کی تکمیل کے لئے کہ انجمن اوقاف کا قیام عمل میں لایا گیا ہے جوروز اول سے اپنی ذمہ داریاں پوری شفافیت کے ساتھ بخوبی طور پر انجام دے رہا ہے۔ اجلاس میں انجمن اوقاف کے زیر اہتمام دکانوں اور کمرہ جات کے ماہانہ کرایوں میں حسب ضابطہ اضافے پر بھی غور کیا گیا۔

متعلقہ اسٹوریز

ری کمنڈیڈ اسٹوریز