مودی حکومت سے مایوس انا ہزارے کا عوامی تحریک چھیڑنے کا اعلان

Dec 05, 2017 03:57 PM IST | Updated on: Dec 05, 2017 03:57 PM IST

نئی دہلی۔ ملک میں بدعنوانی سے نمٹنے کے لئے مضبوط لوک پال کی تعیناتی کے مطالبے پر منموہن حکومت کے خلاف عوامی تحریک چھیڑنے والے معمر سماجی کارکن انا ہزارے نے اب بدعنوانی کے معاملے میں ہی مودی حکومت کے خلاف حملہ بولتے ہوئے ' بدعنوانی سے پاک ہندوستان' کے اس نعرے کو کھوکھلا قرار دیا ہے۔ مسٹر انا ہزارے نے آج یہاں پریس کانفرنس میں مودی حکومت کے کام کاج پر مایوسی کا اظہار کرتے ہوئے کہا کہ وہ بدعنوانی کے خلاف مؤ ثر کارروائی کرنے اور کسانوں کے مسائل حل کرنے میں ناکام رہی ہے، کیونکہ مودی حکومت نے مرکز میں مضبوط لوکپال اور ریاستوں میں مضبوط لوک آیکت کی تقرری نہیں کی ہے۔

انا ہزارے نے کہا وہ بدعنوانی، کسانوں کے مسائل اور انتخابی اصلاحات كے مطالبے پر آئندہ سال 23 مارچ کو ' یوم شہداء' پر قومی دارالحکومت سے عوامی تحریک کا آغاز کریں گے۔ اس کے لئے جگہ دینے کے لئے انہوں نے مرکزی وزیر داخلہ راج ناتھ سنگھ کو خط لکھا ہے۔ تحریک سے پہلے وہ ملک بھر میں عوامی جلسے کریں گے اور عوام کو بیدار کرنے کا کام کریں گے۔ انا ہزارے نے کہا کہ پہلے منموہن حکومت پبلک سیکٹر میں بڑھتی بدعنوانی پر قد غن لگانے میں ناکام رہی اور اب وزیر اعظم نریندر مودی کی زیر قیادت این ڈی اے حکومت نے لوکپال قانون کو کمزور ہی کیا ہے۔ مسٹر مودی نے لوک سبھا انتخابات میں لوک پال بنانے کا وعدہ کیا تھا لیکن اقتدار میں آتے ہی ان کی حکومت نے لوک پال قانون كو کمزور کر دیا۔ حکومت ایک طرف تو ' بدعنوانی سے پاک ہندوستان ' کے بڑے -بڑے اشتہارات لگاتی ہے، دوسری طرف کرپشن پر لگام لگانے والے قانون کو کمزور کر رہی ہے۔ جبکہ 80 فیصد بدعنوانیوں کو مضبوط لوکپال قانون کے ذریعہ روکا جاسکتا ہے۔

مودی حکومت سے مایوس انا ہزارے کا عوامی تحریک چھیڑنے کا اعلان

معمر سماجی کارکن انا ہزارے: فائل فوٹو۔

ان کا کہنا تھا کہ کسانوں کے قرض معافی کی خبریں شہ سرخیوں میں آنے کے باوجود ملک کے مختلف حصوں میں روزانہ سیکڑوں کسان خودکشی کررہے ہیں اور اس سے یہ ثابت ہوتا ہے کہ کسانوں کے حقیقی مسائل کو حل نہیں کیا جارہا ہے۔ لوکپال و لو ک آیکت بل (ترمیمی) بل 2016 کو لوک سبھا میں 27 جولائی 2016 کو پاس کیا گیا اور اس کے اگلے دن ہی راجیہ سبھا میں اسے منظور کرلیا گیا، جبکہ 28 جولائی کو صدر جمہوریہ کی طرف سے اس کو نوٹیفائی کردیا گيا۔ اس طرح صرف تین دنوں میں انسداد بدعنوانی کا اہم قانون بنایا گیا ، جس میں قانون ساز ی کے کئی دفعات کو حذف کردیا گیا ہے۔

متعلقہ اسٹوریز

ری کمنڈیڈ اسٹوریز