ایک دو کو چھوڑ کر زیادہ تر مغل حکمراں عیاش تھے : شیعہ وقف بورڈ چیئرمین وسیم رضوی

سیاسی لیڈروں کی بیان بازیوں کے دوران اب اترپردیش شیعہ سینٹرل وقف بورڈ کے چیئرمین بھی میدان میں کود پڑے ہیں ۔

Oct 17, 2017 08:14 PM IST | Updated on: Oct 17, 2017 08:14 PM IST

لکھنو: تاج محل کو لے کر بی جے پی کے ممبر اسمبلی سنگیت سوم کے متنازع تبصرہ کے بعد بیان بازیوں کا سلسلہ جاری ہے ۔ سیاسی لیڈروں کی بیان بازیوں کے دوران اب اترپردیش شیعہ سینٹرل وقف بورڈ کے چیئرمین بھی میدان میں کود پڑے ہیں ۔ چیئرمین وسیم رضوی کا کہنا ہے کہ زیادہ تر مغل حکمراں عیاش تھے اور ہندوستان کے مسلمان انہیں اپنا آئیڈیل نہیں مانتے ہیں۔

شیعہ سینٹرل وقف بورڈ کے چیئرمین وسیم رضوی کے مطابق تاج محل محبت کی نشانی ہوسکتی ہے ، لیکن عبادت کی جگہ نہیں ہے۔ انہوں نے کہا کہ ایک دو کو چھوڑ کر زیادہ مغل عیاش تھے اور مسلمان انہیں اپنا آئیڈیل نہیں مانتے ہیں۔

ایک دو کو چھوڑ کر زیادہ تر مغل حکمراں عیاش تھے : شیعہ وقف بورڈ چیئرمین وسیم رضوی

اجودھیا میں بھگوان رام کی مورتی کے معاملہ پر وسیم رضوی نے کہا کہ یہ افسوس کی بات ہے کہ رام کی مورتی لگانے کی مخالفت کی جارہی ہے۔ انہوں نے کہا کہ یہ ایک اچھا قدم ہے ، کیونکہ اجودھیا ہندووں کی وراثت کا مرکز ہے۔ انہوں نے کہا کہ جب مایاوتی اپنے خود کی مورتیاں بنوا رہی تھیں ، تب تو کسی نے مخالفت نہیں کی تھی ۔ انہیں سمجھ میں نہیں آتا کہ رام کی مورتی کو لے کر اس کا مدعا کیوں بنایا جارہا ہے۔

خیال رہے کہ شیعہ سینٹرل وقف بورڈ نے منگل کو ہی اعلان کیا ہے کہ وہ ضرورت پڑنے پر سرکار کو مورتی کیلئے زمین فراہم کرے گی ۔ یہی نہیں بورڈ نے وزیر اعلی یوگی آدتیہ ناتھ کو ایک خط بھیج کر کہا ہے کہ مورتی میں شری رام کے ترکش کیلئے 10 چاندی کے تیر بھی بورڈ دے گا۔

Loading...

Loading...

متعلقہ اسٹوریز

ری کمنڈیڈ اسٹوریز