سماجی کارکن غیور الحسن قومی اقلیتی کمیشن کے سربراہ مقرر ، پانچ نئی تقرریاں ، مزید دو کا انتخاب زیر عمل

May 24, 2017 07:31 PM IST | Updated on: May 24, 2017 07:33 PM IST

نئی دہلی : یو پی کے سماجی کارکن غیور الحسن کو قومی اقلیتی کمیشن کا سربراہ مقرر کرتے ہوئے مرکزی حکومت نے آج اقلیتی فرقوں کے مفادات کے تحفظ کے لئے سرگرم قومی اقلیتی کمیشن کے خالی عہدوں پر پانچ ارکان کی تقرری کی ۔ اقلیتی امور کے مرکزی وزیر مملکت آزادانہ چارج مختار عباس نقوی نے ان تقرریوں کی تصدیق کرتے ہوئے کہا کہ وہ انتہائی پر امید ہیں کہ یہ اہل لوگ اقلیتوں کے امور کے ساتھ انصاف کریں گے۔

خیال رہے کہ یہ اسامیاں کچھ دنوں سے خالی پڑی تھیں جس کی وجہ سے حکومت کو اپوزیشن کی تنقید کا سامنا تھا۔ ارکان کے یہ عہدے اسی سال مارچ میں خالی ہوئے تھے۔ کانگریس کی قیادت والی سابقہ یو پی اے حکومت کے مقرر کردہ کمیشن کے ا رکان رواں سال نو مارچ کے تک ریٹائرہوتے رہے۔

سماجی کارکن غیور الحسن قومی اقلیتی کمیشن کے سربراہ مقرر ، پانچ نئی تقرریاں ، مزید دو کا انتخاب زیر عمل

کیرالہ کے بی جے پی لیڈر جارج کورین، مہاراشٹر کی سابق وزیر سلیکھا کمبھارے، گجرات سے جین نمائندے سنیل سنگھی اورا ڈواڑا اتھورنن انجمن کے چیف پریسٹ وڈا دستورجي خورشید کمیشن کے دیگر ارکان میں شامل ہیں۔ ذرائع نے بتایا کہ کمیشن کے دو اور ارکان کی تقرری بھی عمل میں لائی جا رہی ہے۔

جنوری 2014 میں جین کمیونٹی کی اقلیت کے طور پر منظوری کے بعد اس کمیونٹی کے کسی شخص کو پہلی بار کمیشن کا رکن مقرر کیا گیا ہے۔ کمیشن کے ارکان کی میعاد تین سال کی ہوتی ہے. ذرائع نے بتایا، '' اب تک روایت یہ تھی کہ کسی ریٹائرڈ جج یا بیوروکریٹ کو کمیشن کا چیئرمین یا ممبر بنایا جاتا تھا۔ ایسا شاید پہلی بار ہوا ہے کہکمیشن کے سبھی اراکین ایسے چنے گئے ہیں جو معاشرتی کارکن ہیں اور معاشرے کی بنیادی حقیقت سے آگاہ ہیں۔

متعلقہ اسٹوریز

ری کمنڈیڈ اسٹوریز