مرکزی حکومت نے زیور میں دوسرا بین الاقوامی ہوائی اڈہ بنانے کو دی منظوری

Jun 24, 2017 04:19 PM IST | Updated on: Jun 24, 2017 04:20 PM IST

نئی دہلی۔ حکومت نے قومی دارالحکومت خطہ(این سی آر) میں دوسرا بین الاقوامی ہوائی اڈہ جیور میں بنانے کی منظوری دے دی ہے۔ شہری ہوابازی کے وزیر اشوک گجپتی راجو نے آج یہاں بتایا کہ وزارت نے جیور میں تین ہزار ہیکٹئر زمین پر نیا ہوائی اڈہ بنانے کی اصولی طور پر منظوری دے دی ہے۔ ہوائی اڈہ اگلے پانچ سے چھ سال میں بن کر تیار ہوجائے گا۔ پہلے مرحلے میں دس ہزار کروڑ روپے کا خرچ آئے گا۔ مسٹر راجو نے بتایا کہ سال 2024 تک دہلی کا اندرا گاندھی بین الاقوامی ہوائی اڈہ اپنی پوری صلاحیت پر پہنچ جائے گا اور ایسے میں این سی آر میں دوسرے بین الاقوامی ہوائی اڈے کی ضرورت ہوگی۔

مسٹر سنگھ نے بتایا کہ ہوائی اڈے کے قیام میں یمنا ایکسپریس وے صنعتی ترقیاتی اتھارٹی کی بھی مدد لی جائے گی ۔ پہلے مرحلے میں ایک ہزار ہیکٹئر زمین ایکوائر کی جائے گی جس کے لئے دو ہزار کروڑ روپے کی ضرورت ہوگی۔ پروجیکٹ کے لئے کل تین ہزار ہیکٹئر زمین کی ضرورت ہوگی۔ ان کا کہنا تھا کہ ہوائی اڈے کی عمارت کی تعمیر کے لئے پانچ سو ہیکٹےئر زمین کی صرورت ہوگی۔ پروجیکٹ پر پندرہ سے بیس ہزار کروڑ روپے خرچ ہونے کا اندازہ ہے۔اسے پبلک پرائیوٹ پارٹنرشپ بنیاد پر کیا جائے گا۔ انہوں نے بتایا کہ دہلی ہوائی اڈے کی سالانہ مسافروں کی صلاحیت قریب ایک کروڑ ہے۔ مستقبل میں اسے بڑھنا ہے ایسے میں جیور بین الاقوامی ہوائی اڈے سے دہلی ہوائی اڈے کو کافی مدد ملے گی۔ اس سے قومی دارالحکومت خطہ بھی ڈیولپ ہوگا۔

مرکزی حکومت نے زیور میں دوسرا بین الاقوامی ہوائی اڈہ بنانے کو دی منظوری

اس دوران ریاستی حکومت بودھ سرکٹ اور گنگا درشن کے لئے ہیلی کاپٹر سروس شروع کرنے پر سنجیدگی سے غور کررہی ہے۔ اس کیلئے مرکزی شہری ہوابازی وزارت کو تجویز بھیجی گئی ہے۔ بودھ سرکٹ میں ہوائی سروس شروع کرنے سے کشی نگر، سارناتھ ، سراوستی جیسے مقامات پر آنے والے بودھ عقیدت مندوں کو کافی فائدہ ہوگا۔ ا سے ریونیو بھی بڑے گا۔ کشی نگر مہاتما بدھ کے نروان کی وجہ سے مشہور ہے ۔ ریاست کے پوروانچل میں واقع اور بہار سے قریب کشی نگر میں سری لنکا، کوریا، جاپان، چین اور تھائی لینڈ جیسے ملکوں سے بڑی تعداد میں عقیدت مند آتے ہیں۔

متعلقہ اسٹوریز

ری کمنڈیڈ اسٹوریز