کشمیر کی آزادی کا خواب دیکھنے والے احمقوں کی دنیا میں رہتے ہیں : آرمی چیف

آرمی چیف جنرل بپن راوت نے کہا ہے کہ جو لوگ یہ سوچتے ہیں کہ پاکستان انجام کار کشمیر حاصل کرلے گا وہ احمقوں کی دنیا میں رہتے ہیں

Feb 24, 2017 09:20 PM IST | Updated on: Feb 24, 2017 09:20 PM IST

نئی دہلی: جموں و کشمیر کے علیحدگی پسند عناصر کو جنہیں سرحد پار سے تعاون ملتا ہے، اپنے ایک دو ٹوک پیغام میں ہندوستان کے آرمی چیف جنرل بپن راوت نے کہا ہے کہ جو لوگ یہ سوچتے ہیں کہ پاکستان انجام کار کشمیر حاصل کرلے گا وہ احمقوں کی دنیا میں رہتے ہیں ۔ جنرل راوت نے ایک دفاعی نیوز پوٹل کو ایک انٹرویو میں کہا ہے کہ احمقوں کی دنیا میں رہ کر(کچھ لوگو ں کا ) یہ کہنا کہ (نام نہاد) آزادی مل جائے گی او ر اس طرح وہ پاکستان میں شامل ہوجائیں گے جو کشمیر حاصل کرلے گا ، احمقوں کی جنت میں رہنے جیسا ہے ۔

آرمی چیف نے اسی کے ساتھ یہ قسم بھی کھائی کہ وہ ریاست میں حالات پر قابو پاکر رہیں گے اور کہا کہ ’’اس کی کچھ قیمت چکانی ہوگی اور قیمت مقامی آبادی چکا رہی ہے‘‘۔ انہوں نے ڈیفنس ایویشن پوسٹ سے بات چیت میں کہا کہ ’’ میں کشمیری عوام خاص طور پر شورش برپا کرنے والوں کے والدین سے مل کر ان سے یہ کہنا چاہونگا کہ اس طرح جنوبی کشمیر یا کشمیر کے لوگوں کے ساتھ اچھا نہیں ہورہا ہے‘‘۔

کشمیر کی آزادی کا خواب دیکھنے والے احمقوں کی دنیا میں رہتے ہیں : آرمی چیف

جنرل بپن راوت نے جنگجوؤں سے کہا کہ وہ ہتھیار ڈال دیں اور خود کو حکام کے حوالے کردیں ۔ انہوں نے کہا کہ یہ بات واضح رہے کہ ہندوستانی فوج اور ہندوستانی حکومت دونوں حالات پر قابو پانے کی کافی طاقت رکھتی ہیں ۔ خبردار کرنے والے انداز میں جنرل راوت نے کہا کہ بصورت دیگر خسارے میں کشمیر ی عوام ہی ہونگے’’یہ وہ سچ ہے جسے جتنی جلد وہ سمجھ لیں بہتر رہے گا‘‘۔ جنرل راوت نے جنوبی کشمیر میں جنگجوؤں کی طرف سے گھات لگاکر تازہ حملے کے بعد اتنا سخت پیغام دیا ہے ۔ اس حملے میں تین فوجی اور ایک عام خاتون کی موت ہوگئی تھی۔

Loading...

Loading...

متعلقہ اسٹوریز

ری کمنڈیڈ اسٹوریز