Live Results Assembly Elections 2018

پٹرول اور ڈیزل کی قیمتوں میں اضافہ پر وزیر خزانہ نے اپوزیشن کو دیا یہ جواب

مسٹر جیٹلی نے مہنگائی بڑھنے کے سوال پر کہا کہ دو سال پہلے تک مہنگائی جب گیارہ سے بارہ فیصد پر پہنچ گئی تھی تب یہ کوئی معاملہ نہیں تھا لیکن آج جب یہ 3.26 فیصد پر ہے تو اس پر شور مچایا جارہا ہے۔

Sep 20, 2017 06:00 PM IST | Updated on: Sep 20, 2017 06:26 PM IST

نئی دہلی۔  وزیر خزانہ ارون جیٹلی نے پٹرولیم مصنوعات کی قیمتوں میں گذشتہ دو ماہ کے دوران ہوئے اضافہ پر حکومت کی نکتہ چینی کرنے والوں کو آج آڑے ہاتھوں لیتے ہوئے کہا کہ بین الاقوامی اسباب کی وجہ سے ان کی قیمتوں میں اضافہ ہوا ہے ۔ مسٹر جیٹلی نے کابینہ کے فیصلوں کی جانکاری دینے کے دوران ایک سوال کے جواب میں کہا کہ امریکہ میں طوفان کی وجہ سے پٹرولیم مصنوعات کی رفائنرنگ لاگت بڑھ گئی ہے جس کی وجہ سے قیمت میں اضافہ کرنا پڑا تھا جو محدود دائرے میں ہی رہی ہیں۔

انہوں نے کہا کہ اس سلسلے میں پٹرولیم کے وزیر بھی بیان دے چکے ہیں لیکن پھر بھی کچھ سیاسی جماعتیں حکومت کی نکتہ چینی کررہی ہیں لیکن ان جماعتوں کی جہاں حکومتیں ہیں ان ریاستوں میں پٹرولیم مصنوعات پر ویٹ میں کمی کرنی چاہئے۔ انہوں نے کہا کہ پٹرولیم مصنوعات پر ٹیکس سے ملنے والی رقم کے مرکزی پول میں سے ریاستوں کو 42فیصد رقم دی جاتی ہے اور ان ریاستوں کو یہ رقم لینے سے منع کردینا چاہئے۔

پٹرول اور ڈیزل کی قیمتوں میں اضافہ پر وزیر خزانہ نے اپوزیشن کو دیا یہ جواب

مسٹر جیٹلی نے مہنگائی بڑھنے کے سوال پر کہا کہ دو سال پہلے تک مہنگائی جب گیارہ سے بارہ فیصد پر پہنچ گئی تھی تب یہ کوئی معاملہ نہیں تھا لیکن آج جب یہ 3.26 فیصد پر ہے تو اس پر شور مچایا جارہا ہے۔ انہوں نے کہا کہ یہ ابھی چار فیصد مہنگائی کے دائرے میں ہے حالانکہ مانسون میں سیزنل اسباب سے مہنگائی میں اضافہ ہوتا ہے۔

Loading...

Loading...

متعلقہ اسٹوریز

ری کمنڈیڈ اسٹوریز