جی ایس ٹی کونسل اچھا کام کرے، یہ ہم سب کی ذمہ داری: ارون جیٹلی

Mar 29, 2017 02:37 PM IST | Updated on: Mar 29, 2017 02:37 PM IST

نئی دہلی۔  وزیر خزانہ ارون جیٹلی نے جی ایس ٹی کونسل کو اتفاق رائے سے قائم ملک کا پہلا وفاقی ادارہ قراردیتے ہوئے آج کہا کہ اس میں مرکز اور تمام ریاستوں کی نمائندگی ہے اور انہیں امید ہے کہ یہ اچھا طریقے سے کام کرے گی۔ مسٹر جیٹلی نے لوک سبھا میں گڈس اینڈ سروسز ٹیکس (جی ایس ٹی) سے منسلک چار بل مشترکہ طور پر بحث کے لئے پیش کرتے ہوئے کہا کہ اس بل کا مقصد پورے ملک میں یکساں ٹیکس نظام نافذ کرنا ہے۔ ملک میں اس وقت جاری بالواسطہ ٹیکس نظام 15 ستمبر تک جاری رہے گا اور اس کے بعد پورے ملک میں یکساں ٹیکس کا نیا نظام نافذ ہو جائے گا۔ جی ایس ٹی کو بحث کے لئے پیش کرتے وقت ایوان میں وزیر اعظم نریندر مودی اور کانگریس صدر سونیا گاندھی بھی موجود تھیں۔

انہوں نے کہا کہ چاروں بل جی ایس ٹی سے منسلک ہیں اور اس کے ذریعے ٹیکس نظام کو وفاقی ڈھانچے میں تبدیل کیا جا رہا ہے۔ پورے نظام کے لئے الگ سے انتظامات کئے گئے ہیں جن میں سے سب سے اہم جی ایس ٹی کونسل کا قیام ہے۔ کونسل میں 32 وزیر خزانہ شامل ہیں۔ان میں 29 ریاستوں کے وزراء خزانہ کے علاوہ دہلی اور پڈوچیری کی منتخب حکومتوں کے وزیر خزانہ بھی ہیں۔

جی ایس ٹی کونسل اچھا کام کرے، یہ ہم سب کی ذمہ داری: ارون جیٹلی

ارون جیٹلی: فائل فوٹو

متعلقہ اسٹوریز

ری کمنڈیڈ اسٹوریز