اویسی کا بی جے پی پر نشانہ ، کہا : الیکشن میں مسلمانوں کو ٹکٹ نہیں دیا اب بے روزگار کر رہے ہیں

Mar 31, 2017 08:17 AM IST | Updated on: Mar 31, 2017 08:17 AM IST

یوپی کے وزیر اعلی یوگی آدتیہ ناتھ کے بن جانے کے بعد غیر قانونی سلاٹر ہاوس پر گررہی گاج کو لے کر آل انڈیا مجلس اتحاد المسلمین کے صدر اسد الدین اویسی نے بی جے پی پر نشانہ سادھا ہے۔ خیال رہے کہ یوپی میں مسلمانوں کی ایک بڑی آبادی گوشت کے کاروبار سے وابستہ ہے اور اس پابندی کا سب سے زیادہ اثر مسلم آبادی کی تجارت پر ہی پڑ رہا ہے۔

اسدالدین اویسی نے نے کہا کہ یوپی میں میٹ بندی کی وجہ سے مسلمانوں کو بے روزگاری کا سامنا کرنا پڑ رہا ہے۔اویسي نے کہا کہ حکومت کے اس فیصلہ سے 15 لاکھ لوگ بے روزگار ہو گئے ہے، گھر برباد ہو رہے ہیں، ایک طرف یوپی انتخابات میں بی جے پی نے ایک بھی مسلمان کو ٹکٹ نہیں دیا دوسری طرف حکومت انہیں بے روزگار بھی کر رہی ہے۔

اویسی کا بی جے پی پر نشانہ ، کہا : الیکشن میں مسلمانوں کو ٹکٹ نہیں دیا اب بے روزگار کر رہے ہیں

گیٹی امیجیز

میرٹھ میں وندے ماترم تنازع پر انہوں نے کہا کہ یہ انتہائی افسوس کی بات ہے کہ انگریزوں کے خلاف ہندو مسلمان مل کر لڑے ، لیکن کبھی کسی نے نہیں کہا تھا کہ پہلے آپ وندے ماترم کہئے۔ دراصل حکومت کی منشا ملک کو ہندو راشٹر بنانے کی ہے اور یوپی سے اس کی شروعات کر دی گئی ہے۔

متعلقہ اسٹوریز

ری کمنڈیڈ اسٹوریز