یوپی، اتراکھنڈ، پنجاب، گوا اور منی پور میں اسمبلی انتخابات کی تاریخوں کا اعلان، 11 مارچ کو ووٹوں کی گنتی

Jan 04, 2017 10:47 AM IST | Updated on: Jan 04, 2017 03:49 PM IST

نئی دہلی۔  ملک کی پانچ ریاستوں اتر پردیش، اتراکھنڈ، پنجاب، منی پور اور گوا میں اسمبلی انتخابات چار فروری سے آٹھ مارچ تک کرائے جائیں گے، جن کے نتائج كا اعلان 11 مارچ کو کئے جائیں گے۔ الیکشن کمیشن نے اترپردیش میں تمام 403 نشستوں کے لئے سات مراحل میں، منی پور کی 60 نشستوں کے لئے دو مراحل میں اور اتراکھنڈ، پنجاب اور گوا میں ایک ایک مرحلے میں انتخابات کرانے آج اعلان کیا۔ چیف الیکشن کمشنر نسیم زیدی نے یہاں پریس کانفرنس میں انتخابات کی تاریخوں کا اعلان کرتے ہوئے کہا کہ ووٹنگ کے نتائج 11 مارچ کو آئیں گے۔ انتخابات کی تاریخوں کے اعلان کے ساتھ ہی پانچوں ریاستوں میں انتخابی ضابطہ اخلاق نافذ ہو گئے ہیں۔

اتر پردیش میں پولنگ سات مراحل میں 11 فروری، 15 فروری، 19 فروری، 23 فروری، 27 فروری، چار مارچ اور آٹھ مارچ کو ہوگی۔ منی پور میں چار اور آٹھ مارچ کو دو مرحلے میں انتخابات ہوں گے۔ گوا اور پنجاب میں چار فروری اور اتراکھنڈ میں 15 فروری کو پولنگ ہوگی۔ اتر پردیش میں اسمبلی کی 403 نشستوں، پنجاب میں 117، اتراکھنڈ میں 70، منی پور میں 60 اور گوا میں 40 نشستوں کیلئے انتخابات ہوں گے۔ پانچوں ریاستوں کی 690 اسمبلی سیٹوں کے لیے 16 کروڑ سے زائد ووٹر اپنے ووٹ کا حق استعمال کر سکیں گے۔ مجموعی سيٹوں میں سے 133 نشستیں ایس سی، ایس ٹی امیدواروں کیلئے محفوظ ہیں۔ چیف الیکشن کمشنر نے بتایا کہ اس بار کل ایک لاکھ 85 ہزار پولنگ مرکز قائم کیے جائیں گے جو سال 2012 کے مقابلے میں 15 فیصد زیادہ ہیں۔ انہوں نے بتایا کہ اس بار کچھ جدید پولنگ اسٹیشن بنائے جائیں گے۔ ہر پولنگ مرکز پر ایک ووٹر امداد بوتھ بنایا جائے گا۔ کچھ پولنگ پر صرف خواتین ملازمین کی تعیناتی ہوگی۔ بوتھ پر ووٹر کی رازداری کو یقینی بنانے کے لئے ای وی ایم کو لئے كپارٹمنٹ کی اونچائی میں اضافہ کر 30 انچ کر دی گئی ہے۔

یوپی، اتراکھنڈ، پنجاب، گوا اور منی پور میں اسمبلی انتخابات کی تاریخوں کا اعلان، 11 مارچ کو ووٹوں کی گنتی

تصویر: یو این آئی

 زیدی نے بتایا کہ تقریبا سو فیصد ووٹروں کو تصویروالے شناختی کارڈ جاری کئے جا چکے ہیں جو کچھ ووٹر بچے ہوئے ہیں انہیں بھی شیڈول طریقے سے جلد ہی یہ شناختی کارڈ جاری کر دیے جائیں گے۔ ہر خاندان کو ایک رنگی ووٹر ڈائریکٹری دی جائے گی۔ انہوں نے بتایا کہ تمام پولنگ مراکز پر الیكٹرانک ووٹنگ مشینوں پر امیدواروں کی تصاویر ہوں گی۔ اتر پردیش، پنجاب اور اتراکھنڈ میں انتخابات میں امیدوار کے اخراجات کی زیادہ سے زیادہ رقم 28 لاکھ روپے جبکہ منی پور اور گوا میں یہ رقم 20 لاکھ ہوگی۔ انتخابی اخراجات میں شفافیت لانے کیلئے کمیشن نے انتخابات میں چندہ لینے اور مہم میں اخراجات کی ادائیگی کے لئے 20 ہزار روپے سے زیادہ کی نقد لین دین پر روک لگا دی ہے۔ امیدواروں کو اس کے لئے چیک، ڈرافٹ یا دیگر ڈیجیٹل ذریعے کا ہی استعمال کرنا پڑے گا۔ گوا میں تمام پولنگ بوتھوں پر ووٹ ڈالنے کے بعد ووٹر کو پولنگ کی پرچی ملے گی۔

الیکشن میں معذوروں کے لئے ہوں گے خاص انتظامات

اترپردیش، اتراکھنڈ، پنجاب، گوا اور منی پور کے اسمبلی انتخابات میں معذوروں کی پولنگ کرانے کے لئے خصوصی انتظامات کیے جائیں گے۔ چیف الیکشن کمشنر نسیم زیدی نے آج یہاں ان پانچ ریاستوں میں ووٹنگ پروگرام کا اعلان کرتے ہوئے یہ اطلاع دی۔ انہوں نے کہا کہ ووٹنگ مراکز پر معذوروں کی پولنگ کے لئے خصوصی انتظامات کیے گئے ہیں جس سے وہ سہولت کے ساتھ ووٹ دے سکیں۔ پولنگ مراکز میں اندر تک جانے کے لئے ڈھال والا راستہ بنایا جائےگا جس سے چلنے میں غیر فعال افراد بھی ویل چیئر کے ذریعے ووٹنگ مشین تک پہنچ سکیں۔ ویل چیئر کے دستیاب نہ ہونے پر مددگار کی مدد لی جا سکے گی۔ نابینا اور ہاتھ سے غیر فعال ووٹروں کے لئے بھی مددگارکا اہتمام کیا جائے گا۔

متعلقہ اسٹوریز

ری کمنڈیڈ اسٹوریز