ریسرچ کے گرتے میعار پر علی گڑھ مسلم یونیورسٹی کے اکیڈمک ریسرچ کی ہوگی آڈٹ انکوائری

Mar 12, 2017 03:17 PM IST | Updated on: Mar 12, 2017 03:17 PM IST

علی گڑھ : حکومت ہند کی ہدایت پریونیورسٹی گرانٹ کمیشن نےعلی گڑھ مسلم یونیورسٹی سمیت ملک کی گیارہ یونیورسٹیوں کے اکیڈمک اور ریسرچ کے معیار میں مسلسل گراوٹ آنے کے سلسلہ میں آڈٹ کرائے جانے کے احکامات جاری کیے ہیں اوراس سلسلہ میں ایک سہ رکنی کمیٹی تشکیل دی گئی ہے ،جو مذکورہ معاملے کی غیر جانبدارنہ انکوائری کرے گی ۔ توقع کی جارہی ہے کہ مذکورہ کمیٹی مارچ کے آخر اور اپریل کے شروعات میں اپنا کام شروع کرے گی ۔

جن یونیورسٹیوں کی کارکردگی پر حکومت نے سوالیہ نشان لگایا ہے ، ان میں علی گڑھ مسلم یونیورسٹی، آلہ آباد یونیورسٹی، پوڈیچری یونیورسٹی، سینٹر یونیورسٹی آف جموں وغیرہ شامل ہیں ۔

ریسرچ کے گرتے میعار پر علی گڑھ مسلم یونیورسٹی کے اکیڈمک ریسرچ کی ہوگی آڈٹ انکوائری

ادھر مسلم یونیورسٹی کے افسربرائے رابطہ عامہ عمر نے مذکورہ معاملہ میں وضاحت کرتے ہوئے کہا ہے کہ ایک اخبار میں شائع خبر کے مطابق اس طرح کی بات کہی جارہی ہے کہ 11 یونیورسٹیوں کے ریسرچ معیار کی جانچ کی جائے گی ، تو ہم بتا دینا چاہتے ہیں کہ علی گڑھ مسلم یونیورسٹی کو دنیا بھر کی بڑی ایجنسیوں نے بہتر رینک دی ہے اور خود یونیورسٹی گرانٹ کمیشن (یوجی سی ) کے ذریعہ اپریل 2016 میں کرائے گئے سروے میں یونیورسٹی کو ملک کی 10 بہترین یونیورسٹیوں میں شامل کیا گیا تھا۔

علاوہ ازیں جب نیک کی ٹیم نےعلی گڑھ کا دورا کیا تھا، تو اے ایم یو کو اے پلس قرار دیا تھا ۔ انھوں نے کہا کہ ہماری یونیورسٹی کی تعلیمی بہتری میں دن بدن اضافہ ہو رہا ہے ۔

متعلقہ اسٹوریز

ری کمنڈیڈ اسٹوریز