کشمیر: برفانی تودے تلے دبنے والے سبھی پانچ فوجی اہلکاروں کو زندہ بچا لیا گیا

Jan 28, 2017 02:31 PM IST | Updated on: Jan 28, 2017 09:16 PM IST

سری نگر۔  شمالی کشمیر کے ضلع کپواڑہ کے مژھل سیکٹر میں ہفتہ کو برفانی تودے کے تلے دبنے والے سبھی پانچ فوجی اہلکاروں کو زندہ بچالیا گیا ہے۔ سرکاری ذرائع نے یو این آئی کو بتایا کہ فوج کے 56 راشٹریہ رائفلز (آر آر) سے وابستہ پانچ فوجی اہلکاروں پر مشتمل ایک گشتی پارٹی مژھل سیکٹر میں لائن آف کنٹرول (ایل او سی) کے نزدیک معمول کی گشت پر نکلی۔ انہوں نے بتایا ’گشت کے دوران پانچوں فوجی اہلکار ایک برفانی تودے کی زد میں آکر زندہ برف میں دب گئے‘۔ سرکاری ذرائع نے بتایا کہ سخت موسمی حالات کے باوجود بچاؤ مہم شروع کی گئی۔ انہوں نے بتایا ’کئی گھنٹوں کی مشقت کے بعد سبھی پانچ فوجی اہلکاروں کو بچالیا گیا‘۔ انہوں نے بتایا کہ سبھی فوجی اہلکاروں کو اسپتال منتقل کیا گیا ہے جہاں اُن کی حالت خطرے سے باہر بتائی جارہی ہے۔

قابل ذکر ہے کہ گزشتہ ایک ہفتے کے دوران وادی کے متعدد سرحدی علاقوں میں برفانی تودے گرآنے کے واقعات پیش آئے جن میں بڑے پیمانے پر انسانی جانوں کا زیاں ہوا۔ 24 اور 25 جنوری کو شمالی کشمیر کے علاقہ تلیل میں برفانی تودے کے گرنے کے نتیجے میں ایک ہی کنبہ کے چار افراد زندہ دب کر لقمہ اجل بن گئے ۔ اسی دن وسطی کشمیر کے مشہور سیاحتی مقام سونہ مرگ میں ایک فوجی کیمپ کے برفانی تودے کی زد میں آنے سے ایک فوجی میجر ہلاک ہوگیا۔ اس کے بعد شمالی کشمیر کے ضلع بانڈی پورہ کے گریز سیکٹر میں دو فوجی چوکیوں اور فوج کی ایک گشتی پارٹی کے بھاری برکم برفانی تودوں کی زد میں آنے سے 14 فوجی اہلکار ہلاک ہوگئے۔

کشمیر: برفانی تودے تلے دبنے والے سبھی پانچ فوجی اہلکاروں کو زندہ بچا لیا گیا

پی ٹی آئی

ستائیس جنوری کو شمالی کشمیر کے ضلع بارہمولہ کے اوڑی سیکٹر میں برفانی تودے کی زد میں آکر ایک معمر شخص کی موت واقع ہوئی ۔ اس دوران سرکاری ذرائع نے یو این آئی کو بتایا کہ وادی اور خطہ لداخ کے بالائی علاقوں میں برفانی تودے گرآنے کی تازہ وارننگ جاری کردی گئی ہے۔

متعلقہ اسٹوریز

ری کمنڈیڈ اسٹوریز