کشمیر میں برفانی تودے گرنے سے 10 فوجی اہلکار جاں بحق ، متعدد لاپتہ

Jan 26, 2017 02:42 PM IST | Updated on: Jan 26, 2017 04:17 PM IST

سری نگر: شمالی کشمیر کے ضلع بانڈی پورہ کے گریز سیکٹر میں دو فوجی چوکیوں اور فوج کی ایک گشتی پارٹی کے بھاری برکم برفانی تودوں کی زد میں آنے سے 10 فوجی اہلکار جاں بحق جبکہ متعدد دیگر لاپتہ ہوگئے ہیں۔ بدھ اور جمعرات کو پیش آنے والے ان واقعات کے بعد شروع کی گئی بچاؤ کاروائیوں کے دوران 7 فوجی اہلکاروں کو بچالیا گیا ہے۔ وزارت دفاع کے ترجمان کرنل راجیش کالیا نے بتایا کہ آخری اطلاعات ملنے تک علاقہ میں بڑے پیمانے پر بچاؤ کاروائیاں جاری تھیں ۔ انہوں نے بتایا کہ فوج کی دو چوکیوں پر برفانی تودے گرآنے کا پہلا واقعہ بدھ کے روز پیش آیا ۔

دفاعی ترجمان نے بتایا ’شدید برف باری اور سخت موسمی حالات کے باوجود بچاؤ کاروائیاں فوری طور پر شروع کی گئیں‘۔ انہوں نے بتایا ’بچاؤ ٹیموں نے کل ایک جونیئر کمیشنڈ افسر (جے سی او) اور چھ دیگر فوجی اہلکاروں کو برف تلے سے زندہ برآمد کیا ‘۔ انہوں نے بتایا کہ آج صبح تین فوجی اہلکاروں کی لاشیں برآمد کی گئیں‘۔ دفاعی ترجمان نے بتایا کہ اسی علاقہ میں برفانی تودا گر آنے کا دوسرا واقعہ جمعرات کو اس وقت پیش آیا جب فوج کی ایک گشت پارٹی اگلی چوکیوں کی طرف پیش قدمی کررہی تھی۔

کشمیر میں برفانی تودے گرنے سے 10 فوجی اہلکار جاں بحق ، متعدد لاپتہ

علامتی تصویر

انہوں نے بتایا ’اس گشتی پارٹی کے لاپتہ ہونے کے فوراً بعد بچاؤ مہم شروع کی گئی‘۔ انہوں نے بتایا کہ سخت موسمی حالات کے باوجود بچاؤ کاروائیاں جاری ہیں۔ انہوں نے بتایا ’تاحال 7 لاشیں برآمد کی گئی ہیں۔ جبکہ دیگر لاپتہ فوجیوں کی تلاش جاری ہے‘۔ پولیس نے بھی 10 فوجی اہلکاروں کی لاشیں برآمد ہونے کی تصدیق کی ہے۔

سپرنٹنڈنٹ آف پولیس (ایس پی) بانڈی پورہ ذولفقار آزاد نے مقامی میڈیا کو بتایا ہے کہ دس لاشیں برآمد کی گئی ہیں جبکہ چار فوجی اہلکار ابھی بھی لاپتہ ہیں۔ وسطی کشمیر کے مشہور سیاحتی مقام سونہ مرگ میں کل ایک فوجی کیمپ کے برفانی تودے کی زد میں آنے سے ایک فوجی میجر ہلاک ہوگیا۔ گذشتہ برس خطہ لداخ میں واقع دنیا کے بلند ترین میدان جنگ سیاچن میں ایک فوجی کیمپ کے برفانی تودے کی زد میں آنے سے 11 فوجی اہلکار لقمہ اجل بنے تھے۔

متعلقہ اسٹوریز

ری کمنڈیڈ اسٹوریز