داعش کے حق میں نعرے بازی سے اجتناب کیا جائے: گیلانی کی کشمیری نوجوانوں سے اپیل

Jun 27, 2017 11:21 AM IST | Updated on: Jun 27, 2017 11:21 AM IST

سری نگر۔ بزرگ علیحدگی پسند رہنما اور حریت کانفرنس (گ)چیئرمین سید علی شاہ گیلانی نے کشمیری نوجوانوں سے نظم و ضبط کا مظاہرہ کرنے کی اپیل کرتے ہوئے بین الاقوامی شدت پسند تنظیم داعش کے حق میں کسی بھی نعرے بازی سے اجتناب کرنے کے لئے کہا ہے۔ انہوں نے کہا ہے کہ کشمیری عوام کی جدوجہد ایک مقدس جدوجہد ہے جس کا بین الاقوامی سطح پر سرگرم شدت پسند تنظیموں بشمول داعش سے کوئی مطابقت نہیں ہے۔ مسٹر گیلانی نے عیدالفطر کے موقع پر جاری اپنے ایک ویڈیو پیغام میں کہا ہے ’میں نوجوانوں سے خاص طور پر عرض کروں گا کہ میں سال 2010 ء سے گھر کی چہاردیواری میں محبوس ہوں جس کی وجہ سے میں آپ تک نہیں پہنچ پا رہا ہوں۔ میں آپ تک اپنے خیالات پہنچانے میں بالکل معذور بنا دیا گیا ہوں، لیکن میرے تک یہ اطلاعات پہنچتی ہیں کہ ہمارے نوجوان ایسے نعرے بھی دیتے ہیں جو نعرے ہماری جدوجہد کے ساتھ کوئی مطابقت نہیں رکھتے ہیں۔ جیسے داعش کے نعرے دیتے ہیں۔ اور عالمی سطح پر جو گروپ کام کررہے ہیں اُن کے نعرے دیے جاتے ہیں، میں درمندانہ اپیل کروں گا کہ اُن کے نعرے وہ نہ دیں۔ وہ ہمارے لئے کسی بھی حیثیت سے کوئی مطابقت نہیں رکھتے ہیں۔ ہماری جدوجہد صرف اور صرف مقدس جدوجہد ہے۔ ہماری رہنمائی کے لئے ہمارے پاس صرف قرآن اور رسول پاک (ص) کا اسوہ حسنہ ہے‘۔

خیال رہے کہ حریت چیئرمین اپنے بیانات میں متعدد مرتبہ داعش کو دہشت گرد تنظیم قرار دے چکے ہیں۔ انہوں نے جنوری 2016 ء کے اوائل میں جاری ایک بیان میں کہا تھا کہ داعش، تحریک طالبان پاکستان اور اس طرح کی دیگر تنظیمیں اسلام کی نمائندگی نہیں کرتی ہیں۔ مسٹر گیلانی نے اپنے بیان میں کہا تھا ’داعش وہ دہشت گرد تنظیم ہے جو معصوم لوگوں کو قتل کرتی ہے۔ داعش اور اس طرح کی دیگر تنظیموں کا اسلام سے کوئی تعلق نہیں ہے‘۔  حریت چیئرمین نے عیدالفطر کے موقع پر جاری اپنے ویڈیو بیان میں کشمیری نوجوانوں سے نظم و ضبط کا مظاہرہ کرنے کی اپیل کرتے ہوئے کہا ہے ’ہمیں اپنے اندر اتحاد پیدا کرنا چاہیے۔عوام کو قیادت اور قیادت کو عوام پر اعتماد ہونا چاہیے۔ جب تک ہم اپنے اندر نظم و ضبط قائم نہیں کریں گے اور اتحاد و فرمانبرداری کا جذبہ پیدا نہیں کریں گے تو ہماری جدوجہد کے نتائج سامنے آنا بہت مشکل ہے۔ میری دردمندانہ اپیل ہے کہ نوجوانوں کو بالخصوص نظم و ضبط کا مظاہرہ کرنا چاہیے اور اپنے اندر اسلامی کردار پیدا کرنا چاہیے۔ اور سب سے زیادہ انسانیت کا احترام ہو اور انسانی زندگیوں کا احترام ہو‘۔

داعش کے حق میں نعرے بازی سے اجتناب کیا جائے: گیلانی کی کشمیری نوجوانوں سے اپیل

علیحدگی پسند رہنما اور حریت کانفرنس (گ)چیئرمین سید علی گیلانی

 گیلانی نے کہا  کہ وادی میں خون خرابے کی بنیادی وجہ مسئلہ کشمیر ہے۔ انہوں نے کہا ’ہم کسی بھی انسان کے مرجانے پر خوش نہیں ہوتے ہیں۔ بلکہ جو بھی یہاں مرتا ہے چاہے وہ ہندوستان کا فوجی ہو یا ہمارے جوان۔ یا پولیس کا اہلکار ہو۔ ہمیں اس پر بہت دکھ پہنچتا ہے۔ ہمیں کسی موت پر خوشی نہیں ہوتی ہے۔ لیکن بہرحال جب ہمارے مطالبات ، ہماری جو جدوجہد ہے، اس کا جب کوئی پاس ولحاظ نہیں رکھا جاتا ہے اور جو خون بہہ رہا ہے، وہ اس کی بنیادی وجہ یہی ہے‘۔ حریت چیئرمین نے مسئلہ کشمیر کو اقوام متحدہ کی قراردادوں کے عین مطابق حل کرنے پر زور دیتے ہوئے کہا کہ ’ہماری جدوجہد مقدس جدوجہد ہے۔ اور حقائق پر مبنی ہے۔ ہندوستان نے کشمیری عوام کے ساتھ وعدے کئے ہیں۔ اقوام متحدہ میں جو 18 سے زیادہ قراردادیں منظور کی جاچکی ہیں۔ ہم مطالبہ کرتے ہیں کہ اُن قراردادوں کے مطابق جموں وکشمیر کے عوام کو اپنے مستقبل کا فیصلہ کرنے کا موقعہ دیا جائے اور جو عوام کا فیصلہ ہوگا وہ ہر حال میں ہم سب کے لئے قابل قبول ہونا چاہیے‘۔

متعلقہ اسٹوریز

ری کمنڈیڈ اسٹوریز