رام مندر کے معاملہ پر اعظم خان کا علما کونسل، شاہی امام اور اسد الدین اویسی پر طنز

Mar 22, 2017 01:44 PM IST | Updated on: Mar 22, 2017 01:44 PM IST

رام پور۔  سماج وادی پارٹی (ایس پی) کے سینئر لیڈر اور سابق وزیر محمد اعظم خاں نے رام مندر معاملے میں علماء کونسل، شاہی امام اور  اویسی پر طنز کرتے ہوئے کہا کہ وہ ہی اس معاملے میں کوئی سمجھوتہ کرا سکتے ہیں۔ سپریم کورٹ کی طرف سے رام مندر معاملے میں کئے گئے تبصرہ پر رد عمل کا اظہار کرتے ہوئے مسٹر اعظم نے تلخ انداز میں کہا کہ یہ ایک اچھی پہل ہے کیونکہ مذہبی لوگوں نے شروعات کی ہے۔ ظاہر ہے مذہبی لوگ ہی اس میں سمجھوتہ بھی کرا سکتے ہیں۔ انہوں نے طنز کرتے ہوئے کہا کہ علماء کونسل، دہلی جامع مسجد کے شاہی امام احمد بخاری اس مسئلے پر ان سے بات چیت کریں۔

انہوں نے کہا کہ حیدرآباد کے کئی بڑے لیڈر اور مسلمانوں کے بڑے رہنما مولانا اسدالدین اویسی ان سے (آدتیہ ناتھ یوگی سے) بات چیت کریں۔ انہوں نے بریلی کے مولانا توقیر رضا خاں کا ذکر کرتے ہوئے کہا اگر یہ لوگ تیار ہیں تو ظاہر ہے کہ ہندوستان کے مسلمانوں کو کوئی پریشانی نہیں ہوگی کیونکہ یہ ہی وہ علماء ہیں جنہیں پورا ہندوستان جانتا ہے کہ یہ تمام بھارتیہ جنتا پارٹی (بی جے پی) کے نہایت قریب ہیں، ان تمام نے بی جے پی کے لئے کام کیا ہے۔  اس ایودھیا مسئلہ پر بی جے پی سے کوئی سمجھوتہ ہوتا ہے تو یہ ضرور غور کریں گے۔ مسٹر خاں نے یہ بھی کہا کہ الہ آباد کا سلاٹر ہاؤس گزشتہ دو برس سے بند پڑا ہے۔ ہم تو کہتے ہیں آپ گوشت کا ایکسپورٹ بند کر دیجئے، کاٹنا خود بند ہو جائے گا۔ انہوں نے واضح کیا کہ یہ کسی کو نہیں بھولنا چاہئے کہ سلاٹر ہاؤس کا لائسنس ریاست کی حکومت نہیں بلکہ حکومت ہند دیتی ہے۔

رام مندر کے معاملہ پر اعظم خان کا علما کونسل، شاہی امام اور اسد الدین اویسی پر طنز

فائل فوٹو

متعلقہ اسٹوریز

ری کمنڈیڈ اسٹوریز