لڑکی کا الزام: داتی مہاراج اور اس کے شاگردوں نے کی بار بار عصمت دری

پچیس سال کی ایک لڑکی نے خود ساختہ بابا اور اس کے شاگردوں پر اس کے ساتھ بار بار عصمت دری کرنے کا الزام لگایا ہے۔

Jun 12, 2018 05:16 PM IST | Updated on: Jun 12, 2018 05:18 PM IST

پچیس سال کی ایک لڑکی نے خود ساختہ بابا اور اس کے شاگردوں پر اس کے ساتھ بار بار عصمت دری کرنے کا الزام لگایا ہے۔ جنوبی دہلی کے فتح پور بیری تھانے میں لڑکی نے کل داتی مہاراج کے خلاف شکایت دی ہے۔ لڑکی نے پولیس کو بتایا کہ وہ تقریبا گزشتہ دس سالوں سے مہاراج کی پیروکار تھی۔ لیکن مہاراج اور شاگردوں کے ذریعہ بار بار عصمت دری کئے جانے کے بعد وہ اپنے گھر راجستھان لوٹ گئی۔

لڑکی نے الزام لگایا ہے کہ بابا کی ایک دیگر خاتون پیروکار اسے مہاراج ​​کے کمرے میں زبردستی بھیجتی تھی۔ منع کرنے پر وہ دھمکی دیتی تھی کہ وہ سبھی سے کہے گی کہ متاثرہ دوسرے شاگردوں کے ساتھ بھی جنسی تعلق رکھتی ہے۔

لڑکی کا الزام: داتی مہاراج اور اس کے شاگردوں نے کی بار بار عصمت دری

جنوبی دہلی کے فتح پور بیری تھانے میں لڑکی نے کل داتی مہاراج کے خلاف شکایت دی ہے۔

وہ تقریبا دو سال پہلے آشرم سے بھاگ گئی تھی اور ایک طویل عرصے سے ڈپریشن میں تھی۔ ڈپریشن سے ابھر کر اس نے اپنے والدین کو پوری بات بتائی اور ان کے ساتھ پولیس سے شکایت کی ہے۔

دہلی خواتین کمیشن کی صدر سواتی ماليوال نے متاثرہ سے ملاقات کر کہا کہ اسے پولیس سیکورٹی ملنی چاہئے۔

ماليوال نے ٹویٹ کیا، "داتی مہاراج کی طرف سے مبینہ طور پر عصمت دری کی شکار ہوئی لڑکی سے ملی۔ لڑکی کی کہانی انتہائی ڈراونی ہے۔ ایسا لگتا ہے کہ وہ شدید تشدد سے گزری ہے۔ اس کی جان کو خطرہ ہے۔ دہلی پولیس کو اسے فوری طور پر سیکورٹی مہیا کرنے کو کہا ہے۔ داتی مہاراج کو فوری طور پر گرفتار کیا جانا چاہئے۔

متعلقہ اسٹوریز

ری کمنڈیڈ اسٹوریز