ایودھیا معاملہ: بابری مسجد انہدام کیس میں آج سے روزانہ ہو گی سماعت

May 22, 2017 10:08 AM IST | Updated on: May 22, 2017 12:45 PM IST

نئی دہلی۔ ایودھیا میں بابری مسجد انہدام کیس میں سی بی آئی کی خصوصی عدالت میں پیر سے روزانہ سماعت ہوگی۔ اس معاملے میں سی بی آئی کی طرف سے دائر چارج شیٹ کی بنیاد پر بی جے پی کے کئی سرکردہ لیڈروں پر الزام طے کئے جانے ہیں۔ اسی معاملے میں ہفتہ کو رام ولاس ویدانتی، چمپت رائے، بی ایل شرما، مہنت نرتیہ گوپال دس اور دھرم داس نے سی بی آئی کی اسپیشل کورٹ میں سرینڈر کیا تھا جس کے بعد انہیں ضمانت دے دی گئی تھی۔

اس دوران ویدانتی نے کہا تھا کہ انہی کے کہنے پر کارسیوکوں نے متنازعہ ڈھانچہ گرا دیا تھا۔ انہوں نے کہا تھا کہ اس معاملے میں سی بی آئی نے لال کرشن اڈوانی، مرلی منوہر جوشی اور اوما بھارتی کو سازشا پھنسایا ہے۔ انہوں نے کہا کہ ان لیڈروں کا ڈھانچہ گرائے جانے میں کوئی کردار نہیں تھا۔ ویدانتی نے کہا کہ اگر رام مندر کے لئے انہیں پھانسی پر چڑھنا پڑے تو بھی وہ تیار ہیں۔

ایودھیا معاملہ: بابری مسجد انہدام کیس میں آج سے روزانہ ہو گی سماعت

بتا دیں کہ 19 اپریل کو سپریم کورٹ نے اپنے حکم میں کیس کے مقدمے کی سماعت ایک ماہ کے اندر شروع کرتے ہوئے روزانہ سماعت کرنے کو کہا تھا۔ عدالت عظمی نے خصوصی سی بی آئی کورٹ کو دو سال میں فیصلہ دینے کے لئے کہا تھا۔ سپریم کورٹ کے حکم کے بعد بی جے پی کے اہم رہنماؤں لال کرشن اڈوانی، مرلی منوہر جوشی، اوما بھارتی سمیت وی ایچ پی کے کئی رہنماؤں پر سی بی آئی کی خصوصی عدالت میں مقدمے کی سماعت چلایا جانا ہے۔

متعلقہ اسٹوریز

ری کمنڈیڈ اسٹوریز