جموں و کشمیر : بانہال حملہ کا تیسرا اور کلیدی ملزم عاقب وحید نجار بھی گرفتار، چینی ساخت کا پستول برآمد

Sep 25, 2017 03:57 PM IST | Updated on: Sep 25, 2017 03:57 PM IST

سری نگر: جموں وکشمیر پولیس نے 20 ستمبر کی شام کو ضلع رام بن کے بانہال میں جواہر ٹنل کے نذدیک واقع ایس ایس بی کیمپ پر ہونے والے مشتبہ جنگجویانہ حملے میں ملوث تیسرے جنگجو کو بھی گرفتار کرلیا ہے۔ ڈپٹی انسپکٹر جنرل آف پولیس (ڈی آئی جی) ڈوڈہ۔ کشتواڑ۔ رام بن رینج بسنت راٹھ نے ایک فیس بک پوسٹ کے ذریعے یہ اطلاع دیتے ہوئے کہا ’بانہال ہلاکت میں ملوث تیسرے نوجوان کو گرفتار کیا گیا ہے‘۔

انہوں نے اس گرفتاری کے لئے پولیس عہدیدار مشتاق چودھری اور رام بن پولیس کی سراہنا کی۔ ریاستی پولیس نے اپنے آفیشل ٹویٹر اکاؤنٹ پر ایک ٹویٹ میں کہا ’بانہال ایس ایس بی حملے کے معاملے میں تیسرے اور کلیدی ملزم کو گرفتار کیا گیا۔ اس کے قبضے سے چینی ساخت کا ایک پستول برآمد کیا گیا‘۔

جموں و کشمیر : بانہال حملہ کا تیسرا اور کلیدی ملزم عاقب وحید نجار بھی گرفتار، چینی ساخت کا پستول برآمد

سرکاری ذرائع نے گرفتار شدہ جنگجو کی شناخت عاقب وحید نجار ساکنہ کسکوٹ کے بطور کی ہے۔ انہوں نے بتایا کہ عاقب کو گذشتہ رات بانہال کے نوگام علاقہ سے گرفتار کیا گیا۔ پولیس نے ایس ایس بی کیمپ پر ہوئے حملے کے حوالے سے 21 ستمبر کی رات کو بانہال سے دو جنگجوؤں غضنفر اقبال کھانڈے اور محمد عارف وانی کی گرفتاری عمل میں لائی تھی۔

پولیس نے دونوں کے بارے میں کہا تھا کہ وہ گذشتہ کئی دنوں سے اپنے گھروں سے غائب تھے۔گرفتار شدگان سے دو رائفلیں بشمول ایک انساس اور ایک اسالٹ رائفل (اے آر 41) برآمد کی گئی تھیں۔ یہ رائفلیں انہوں نے ایس ایس بی کیمپ سے اڑالی تھیں۔ خیال رہے کہ 20 ستمبر کی شام کو بانہال میں واقع ایس ایس بی کیمپ پر ہونے والے مشتبہ جنگجویانہ حملے میں ایس ایس بی کا ایک ہیڈ کانسٹیبل ہلاک جبکہ ایک اے ایس آئی زخمی ہوا تھا۔

متعلقہ اسٹوریز

ری کمنڈیڈ اسٹوریز