ہوشیار ! اس سرکاری بینک نے کم از کم بیلنس کو کیا دوگنا ، نہیں ماننے پر دینا پڑجائے گا آپ کو بھاری جرمانہ

سرکاری بینک بینک آف بڑودہ نے سیونگ اکاونٹس کیلئے کم از کم بیلنس کو دوگنا کردیا ہے۔ بینک کی جانب سے جاری بیان میں کہا گیا ہے کہ کم از کم سہ ماہی اوسط بیلنس دوگنا کرنے کا فیصلہ کیا گیا ہے۔

Jan 13, 2019 10:21 AM IST | Updated on: Jan 13, 2019 10:21 AM IST

سرکاری بینک بینک آف بڑودہ نے سیونگ اکاونٹس کیلئے کم از کم بیلنس کو دوگنا کردیا ہے۔ بینک کی جانب سے جاری بیان میں کہا گیا ہے کہ کم از کم سہ ماہی اوسط بیلنس دوگنا کرنے کا فیصلہ کیا گیا ہے۔ اب بینک کے صارفین کو اپنے سیونگ اکاونٹس میں زیادہ پیسے رکھنے ہوں گے ۔ نیا قانون یکم فروری 2019 سے نافذ العمل ہوجائے گا۔

بینک نے ایس ایم ایس بھیج کر اپنے صارفین کو اس کی جانکاری دی ہے۔ آپ کو بتادیں کہ بینک آف بڑودہ سرکاری بینک ہے ۔ حکومت نے اس میں دینا بینک اور وجیہ بینک کو ضم کرنے کا فیصلہ کیا ہے ۔ انضمام کے بعد یہ ایس بی آئی کے بعد دوسرا سب سے بڑا سرکاری بینک ہوجائے گا۔

ہوشیار ! اس سرکاری بینک نے کم از کم بیلنس کو کیا دوگنا ، نہیں ماننے پر دینا پڑجائے گا آپ کو بھاری جرمانہ

علامتی تصویر

بینک آف بڑودہ نے دیہی علاقوں کی برانچوں کیلئے کم از کم بیلنس کی رقم میں تبدیلی نہیں کی ہے۔ بینک نے ٹویٹر پر بھی اس کی جانکاری دی ہے۔ یکم فروری 2019 سے بڑودہ ایڈوانٹیج سیونگ اکاونٹس میں کم از کم سہ ماہی اوسط بیلنس میں تبدیلی کی گئی ہے۔ بینک کے نئے قانون کے مطابق کم از کم بیلنس نہیں رکھنے پر شہری اور میٹرو سٹیز کی برانچوں کیلئے جرمانہ 200 روپے ہوگا جب کہ نیم شہری برانچوں کیلئے 100 روپے ہوگا۔

سیونگ اکاونٹس میں کم از کم بیلنس نہیں ہونے پر صارفین پر بینک کی طرف سے جرمانہ عائد کیا جائے گا۔ شہری علاقوں کیلئے کم از کم بیلنس ایک ہزار روپے سے بڑھا کر دو ہزار روپے کردیا گیا ہے۔ نیم شہری برانچوں کیلئے اس کو 500 روپے سے بڑھا کر ایک ہزار روپے کردیا گیا ہے۔ بینک اس کیلئے اکاونٹس سے پیسے کاٹے گا۔

Loading...

یہ بھی پڑھیں : اب اس کمپنی نے پیش کیا شاندار آفر ، ایک مرتبہ کرائیں ریچارج اور سال بھر کریں فری کالنگ

 

 

Loading...

متعلقہ اسٹوریز

ری کمنڈیڈ اسٹوریز