بی ایچ یو طالبات پر لاٹھی چارج معاملہ میں چیف پراکٹر نے دیا استعفی، سیکورٹی سخت

Sep 27, 2017 12:08 PM IST | Updated on: Sep 27, 2017 12:09 PM IST

وارانسی۔ بنارس ہندو یونیورسٹی (بی ایچ یو) میں چھیڑخانی کے خلاف احتجاجی مظاہرہ کر رہیں طالبات پر لاٹھی چارج کے معاملے کی اخلاقی ذمہ داری لیتے ہوئے یونیورسٹی کے چیف پراکٹر پروفیسر او این سنگھ نے استعفی دے دیا ہے۔ یونیورسٹی کے انفارمیشن اینڈ پبلک ریلیشنز آفیسر ڈاکٹر راجیش سنگھ نے کل رات صحافیوں کو یہ پریس ریلیز جاری کرکے یہ اطلاع دی۔ ریلیز کے مطابق پرو فیسر سنگھ نے کل دیر رات اپنا استعفی وائس چانسلر پروفیسر گریش چندر ترپاٹھی کو دے دیا، جسے انہوں نے فوری طور پر قبول کر لیا ہے۔

پروفیسر ترپاٹھی کا کہنا ہے کہ یونیورسٹی انتظامیہ اس واقعے کی تحقیقات کے لئے پولیس سمیت دیگر تحقیقاتی افسران کے ساتھ مکمل طور پر تعاون کرے گی۔ انہوں نے کہا کہ بی ایچ او کیمپس میں سکیورٹی کے وسیع انتظامات کئے جا رہے ہیں۔ گرلس ہاسٹلز میں خواتین سیکورٹی افسران کی جلد ہی تعیناتی کی جائے گی اورکافی تعداد میں سی سی ٹی وی کیمرے اور رات کے وقت روشنی کا مناسب انتظام کیا جائے گا۔

بی ایچ یو طالبات پر لاٹھی چارج معاملہ میں چیف پراکٹر نے دیا استعفی، سیکورٹی سخت

پروفیسر ترپاٹھی کا کہنا ہے کہ یونیورسٹی انتظامیہ اس واقعے کی تحقیقات کے لئے پولیس سمیت دیگر تحقیقاتی افسران کے ساتھ مکمل طور پر تعاون کرے گی۔

اس سے قبل انہوں نے الہ آباد ہائی کورٹ کے سابق جج جسٹس وی کے دکشت کی قیادت میں ایک عدالتی کمیٹی تشکیل دے کر پورے معاملے کی جانچ کرانے کا اعلان کیا تھا۔ کل سینئر پولیس سپرنٹنڈنٹ آر کے بھاردواج نے غیرجانبداری اور مؤثر نگرانی کے پیش نظر تشدد کے واقعات اور اس سے منسلک دیگر تمام متعلقہ معاملے کی جانچ کی ذمہ داری کرائم برانچ کو سونپ دی تھی۔

متعلقہ اسٹوریز

ری کمنڈیڈ اسٹوریز