Live Results Assembly Elections 2018

قومی انسانی حقوق کمیشن کا بی ایچ یو معاملہ میں یوگی حکومت اور وائس چانسلر کو نوٹس

کمیشن نے میڈیا رپورٹوں کا نوٹس لیتے ہوئے آج ان تمام حکام سے معاملے کی تفصیلی رپورٹ دینے اور اب تک کی گئی کارروائی کے بارے میں چار ہفتہ میں جواب مانگا ہے۔

Sep 26, 2017 09:49 PM IST | Updated on: Sep 26, 2017 09:49 PM IST

نئی دہلی۔ قومی انسانی حقوق کمیشن نے کاشی ہندو یونیورسٹی (بی ایچ یو) میں چھیڑ خانی کی شکایت پر مبینہ طورپر کارروائی نہیں کئے جانے اور مظاہرین پر لاٹھی چارج کے معاملے کا ازخود نوٹس لیتے ہوئے اترپردیش کے چیف سکریٹری، ڈائرکٹر جنرل آف پولیس اور یونیورسٹی کے وائس چانسلر کو نوٹس جاری کرکے جواب دینے کیلئے کہا ہے۔ کمیشن نے میڈیا رپورٹوں کا نوٹس لیتے ہوئے آج ان تمام حکام سے معاملے کی تفصیلی رپورٹ دینے اور اب تک کی گئی کارروائی کے بارے میں چار ہفتہ میں جواب مانگا ہے۔

کمیشن کا کہنا ہے کہ میڈیا رپورٹوں سے اس بات کے اشارے ملے ہیں کہ یونیورسٹی انتظامیہ کے حکام اور سلامتی اہلکاروں کی سطح پر چوک ہوئی ہے۔ انتظامیہ نے شکایت کاصحیح طریقہ سے نوٹس نہیں لیا ہے۔ کمیشن نے کہا کہ طالبات ان کی شکایت پر کارروائی نہیں ہونے کے خلاف مظاہرہ کررہی تھیں لیکن پولیس نے ان کے ساتھ غیرانسانی سلوک کیا اور یہ انسانی حقوق کی خلاف ورزی ہے۔ یہ خواتین کے احترام سے وابستہ معاملہ ہے لیکن انتظامیہ نے اس کا صحیح طریقہ سے نوٹس نہیں لیا۔

قومی انسانی حقوق کمیشن کا بی ایچ یو معاملہ میں یوگی حکومت اور وائس چانسلر کو نوٹس

Loading...

Loading...

متعلقہ اسٹوریز

ری کمنڈیڈ اسٹوریز