وزیر اعظم مودی کے دورہ وارانسی سے قبل بی ایچ یو کی طالبات کا شدید احتجاج ، بال بھی منڈوائے

وزیر اعظم مودی آج سے وارانسی کے دو روزہ دورہ پر ہوں گے اور ان کے پہنچنے سے پہلے بی ایچ یو کی طالبات نے یونیورسٹی گیٹ کے سامنے چھیڑ چھاڑ کے خلاف احتجاج کیا ۔

Sep 22, 2017 03:44 PM IST | Updated on: Sep 22, 2017 03:44 PM IST

وارانسی : ایک طرف سرکار بیٹی بچاو اور بیٹی پڑھاو کی بات کرتی ہے تو وہیں دوسری طرف وزیر اعظم مودی کے پارلیمانی حلقہ علاقہ وارانسی میں پڑھنے والی طالبات بھی خود کو محفوظ محسوس نہیں کررہی ہیں۔ وزیر اعظم مودی آج سے وارانسی کے دو روزہ دورہ پر ہوں گے اور ان کے پہنچنے سے پہلے بی ایچ یو کی طالبات نے یونیورسٹی گیٹ کے سامنے چھیڑ چھاڑ کے خلاف احتجاج کیا ۔ یہاں تک کہ احتجاج کے دوران ایک طالبہ نے اپنا سر تک منڈوالیا۔

این ڈی ٹی وی کی خبر کے مطابق جس طرح سے ان طالبات نے احتجاج کیا ہے ، اس سے ضلع انتظامیہ کے ہاتھ پیر پھول گئےہیں اور دھرنا کی جگہ پر کثیر تعداد میں پولیس فورس کو تعینات کردیا گیا ہے۔ ان طالبات کا الزام ہے کہ ان کے ساتھ کیمپس میں لگاتار چھیڑ خانی ہوتی رہتی ہے ، لیکن کوئی کارروائی نہیں کی جاتی۔ ان طالبات کا الزام ہے کہ اس میں پراکٹوریل بورڈ کے لوگ بھی شامل ہیں ، جس کی وجہ سے کوئی کارروائی نہیں کی جاتی ہے۔

وزیر اعظم مودی کے دورہ وارانسی سے قبل بی ایچ یو کی طالبات کا شدید احتجاج ، بال بھی منڈوائے

طالبات کے مطابق ان کے ساتھ ہاسٹل کے گیٹ یا کلاس روم میں ہر جگہ آئے دن چھیڑ خانی ہوتی رہتی ہے ۔ جمعرات کی شام کو بھی تروینی ہاسٹل کے باہر کچھ طالبات کے ساتھ چھیڑ چھاڑ کی گئی تو طالبات نے چیف پراکٹر پروفیسر او این سنگھ کو فون کرکے بتایا ۔ طالبات کے مطابق چیف پراکٹر کارروائی کی بجائے طالبات کو ہی برا بھلا کہنا لگے اور کہا کہ 6 بجے کے بعد ہاسٹل کے باہر کیوں گھوم رہی تھیں۔ فی الحال طالبات کارروائی کا مطالبہ کرتے ہوئے دھرنے پر بیٹھی ہوئی ہیں اور انتظامیہ اس معاملہ پر کچھ بھی کہنے کیلئے تیار نہیں ہے۔

متعلقہ اسٹوریز

ری کمنڈیڈ اسٹوریز