حجاب میں بائیک پر خوابوں کو پرواز دیتی یہ لڑکی ہے روشنی مصباح

Feb 05, 2017 03:56 PM IST | Updated on: Feb 05, 2017 07:22 PM IST

نئی دہلی۔ کچھ دنوں پہلے سوشل میڈیا پر ایک ویڈیو جم کر وائرل ہو رہا تھا۔ اس ویڈیو میں حجاب پہنے کچھ سعودی عرب کی لڑکیاں باسکٹ بال کھیل رہی ہیں، اسکیٹنگ کر رہی ہیں، پارٹی کر رہی ہیں، ڈرائیونگ کر رہی ہیں، اسکوٹر چلا رہی ہیں یا یوں کہیے کہ وہ ہر وہ کام کر رہی ہیں، جو وہ کرنا چاہتی ہیں۔ ایسی ہی ایک حجاب والی مسلم لڑکی ان دنوں دہلی میں مشہور ہو رہی ہے۔ غازی آباد سے جامعہ ملیہ اسلامیہ تک سڑکوں پر اسپورٹس بائیک دوڑاتی اس لڑکی کو لوگ مڑ مڑ کر دیکھتے ہیں۔

عام طور پر آپ نے دہلی یا دوسرے شہروں میں لڑکیوں کو اسکوٹی اور گاڑی چلاتے تو دیکھا ہی ہوگا۔ اب بڑے شہروں میں کچھ لڑکیاں موٹر سائیکل بھی چلانے لگی ہیں، لیکن جامعہ میں پڑھنے والی روشنی مصباح ان سب سے الگ ہے۔ بلیک لیدر جیکٹ، جینس، ہائی ہیل بوٹ اور سر پر حجاب پہنے جب روشنی اپنی بائیک پر نکلتی ہیں تو دیکھنے والوں کو ایک الگ ہی طرح کی مثبت توانائی کا احساس ہوتا ہے۔

بائیک پر خوابوں کو پرواز دیتی یہ لڑکی ہے  روشنی مصباح

جامعہ سے عربک اینڈ کلچرل اسٹڈیز میں ایم اے کر رہی روشنی مصباح کا انداز کچھ مختلف ہے۔ روشنی موٹر سائیکل چلانے کے ساتھ ساتھ پڑھائی میں بھی اول ہیں۔ روشنی نے جامعہ ہی سے ماس كميونكیشن بھی کیا ہے۔ تعلیم کے بارے میں روشنی کا کہنا ہے کہ انہیں ابھی بہت کچھ پڑھنا ہے۔

2

بس اتنا جانتی تھی کہ بائیک چلانی ہے

روشنی بتاتی ہیں کہ انہوں نے سب سے پہلے نویں کلاس میں موٹر سائیکل تھامی تھی۔ ان کا کہنا ہے کہ بس میں اتنا جانتی تھی کہ مجھے موٹر سائیکل چلانی ہے۔ کب چلانی ہے، کس طرح چلانی ہے۔ اس بارے میں کچھ نہیں پتہ تھا، جب پہلی بار موٹر سائیکل پر بیٹھی تو اس کا احساس بہت مختلف تھا۔ جو تھوڑا بہت آتا تھا وہی کوشش کی، لیکن بائیک کی ڈرائیور سیٹ پر بیٹھ کر بہت اچھا لگا۔

10

کچھ اس طرح ملی پہلی بائیک

روشنی نے بتایا کہ جب میں نے جامعہ میں داخلہ لیا تو پاپا کو بولا کہ کالج جانے کے لئے موٹر سائیکل چاہئے۔ پاپا نے پوچھا، سچ میں موٹر سائیکل چاہئے۔ میں نے ہاں کہا اور پاپا اور میں اوینجر خرید کر لے آئے۔ تاہم، جب ماں کو پتہ چلا تو انہوں نے کہا کہ لڑکی ہے، دہلی کا ٹریفک بہت خراب ہے۔ گاڑی لے لو۔ موٹر سائیکل رہنے دو، لیکن پاپا نے پورا سپورٹ کیا اور اس طرح مجھے میری پہلی موٹر سائیکل ملی۔

پانچ ماہ میں اوینجر بیچ کرلے لی 2 لاکھ کی اسپورٹس بائیک

روشنی نے اپنی پہلی موٹر سائیکل اوینجر پانچ ماہ میں ہی بیچ دی اور اپنی پسند کی اسپورٹس موٹر سائیکل خرید لی۔ اب روشنی نارنگی، سرخ اور سیاہ رنگ کی دو لاکھ کی قیمت والی دو سو پچاس سی سی والی ہونڈا سی بی آر رپسل چلا رہی ہیں۔ ان کی ڈریم بائیک ڈکاٹی ہے۔

ان گروپس میں اکیلی مسلم گرل ہیں روشنی

روشنی ونڈچیجرس اور دہلی رائل انفيلڈ رائیڈرز جیسے گروپ کی ممبر ہیں۔ جب ان کے پاس اوینجر موٹر سائیکل تھی، تب وہ بجاج اوینجرس کلب کا بھی حصہ رہ چکی ہیں۔ غازی آباد کی رہنے والی روشنی بتاتی ہیں کہ وہ دہلی کے باكرنی گروپ کی سب سے کم عمر کی بائیکر ہیں۔ اس کے ساتھ ہی ان گروپس میں میں واحد مسلم گرل بائیکر بھی ہوں۔

3

جب پاپا نے کہا اس کے لئے کوئی سپر بائیکر ڈھونڈ دیں گے

روشنی کا کہنا ہے کہ ان کی حوصلہ افزائی ان کے پاپا نے کی ہے، جو خود بھی بائیکس کے شوقین ہیں۔ روشنی کہتی ہیں کہ ویسے تو انہیں معاشرے، دوستوں اور خاندان سے خوب سپورٹ مل رہا ہے، لیکن پھر بھی کچھ لوگوں کا کہنا تھا کہ لڑکی بائیک چلاتی ہے، اس کی شادی کیسے ہوگی؟ اس پر روشنی کے پاپا نے کہا کہ کوئی بات نہیں، ہم اس کے لئے کوئی سپر بائیکر ڈھونڈ دیں گے۔ روشنی نے بتایا کہ پاپا کی یہ بات سن کر مجھے اور زیادہ ہمت ملی۔

4

روشنی کی دو چھوٹی بہنیں بھی سیکھ رہی ہیں موٹر سائیکل چلانا

روشنی آج سماج اور دوسری لڑکیوں کے لئے ایک مثال بن کر ابھری ہیں۔ روشنی کی دو چھوٹی بہنیں بھی ہیں، جو اب ان کی طرح ہی موٹر سائیکل چلانا سیکھ رہی ہیں۔ روشنی کا کہنا ہے کہ میں کوئی مشہور شخصیت نہیں بننا چاہتی، لیکن ہاں اتنا ضرور چاہتی ہوں کہ جس طرح میں نے اپنے جذبہ کو ختم نہیں ہونے دیا۔ ویسے ہی آپ سب بھی اپنی صلاحیت اور جذبہ کو پہچانیں۔ اپنے جذبہ کو دبائیں نہیں، اسے دل سے پورا کریں۔

خاندان، دوستوں اور ٹیچرس کا پورا سپورٹ

روشنی کہتی ہیں کہ میرے خاندان کے بعد دوستوں اور ٹیچرس کا مجھے بہت سپورٹ ملا۔ میرے ٹیچرس مجھے کالج میں اسپیشل پارکنگ دستیاب کراتے ہیں۔ میرے دوست ہمیشہ مجھے آگے بڑھنے کے لئے حوصلہ افزائی کرتے ہیں۔ میرا خاندان، دوست اور ٹیچرس میرے ساتھ ہیں۔ مجھے خوشی ہے کہ میں لوگوں کی ذہنیت کو تبدیل کرنے میں اپنا رول ادا کر رہی ہوں۔

موٹر سائیکل پر پوری دنیا کی سیر کرنی ہے

روشنی کی تمنا ہے کہ وہ اپنی موٹر سائیکل پر پوری دنيا کی سیر کریں۔ فی الحال اس سال ان کا پلان موٹر سائیکل سے لداخ جانے کا ہے۔

1

 سپر بائیک ریسنگ ہے خواب

روشنی کا خواب ہے کہ وہ سپر بائیک ریسنگ کا حصہ بنیں اور ریسنگ ٹریک پر اپنی اسپورٹس بائیک دوڑائیں۔

9

ہم خوش نصیب ہیں روشنی نے ہمیں اپنا دوست چنا

روشنی کے دوست ان کے دوست ہونے پر فخر محسوس کرتے ہیں۔ ان کی دوست منيبہ کا کہنا ہے کہ روشنی دہلی اور جامعہ کی اب تک کی سب سے ہاٹسٹ بائیکر ہیں۔ ان کے دوست عطا الرحمان کا کہنا ہے کہ ہمیں روشنی پر بہت فخر ہے۔ ہمیں خوشی ہے کہ روشنی ایک دقیانوسی سوچ سے الگ ہٹ کر کچھ کر رہی ہیں اور دوسروں کے لئے ایک مثال بن رہی ہیں۔

مردولا بھاردواج کی رپورٹ

متعلقہ اسٹوریز

ری کمنڈیڈ اسٹوریز