دہشت گردوں کے خلاف کارروائی میں رکاوٹ ڈالنے والوں کو بھی نہیں بخشا جائے گا : فوجی سربراہ

جموں و کشمیر میں پاکستان اور آئی ایس آئی ایس کا جھنڈا لہرانے والوں سے ملک دشمن عناصر کے طور پر نمٹا جائے گا۔ یہ بات فوج کے سربراہ بپن راوت نے کہی ہے

Feb 15, 2017 09:32 PM IST | Updated on: Feb 15, 2017 09:32 PM IST

نئی دہلی : جموں و کشمیر میں دہشت گردوں کے خلاف کارروائی میں رکاوٹ پہنچانے والے لوگوں کے خلاف بھی فوج اب سخت کارروائی کرے گی۔ جموں و کشمیر میں پاکستان اور آئی ایس آئی ایس کا جھنڈا لہرانے والوں سے ملک دشمن عناصر کے طور پر نمٹا جائے گا۔ یہ بات فوج کے سربراہ وپن راوت نے کہی ہے۔

خیال رہے کہ منگل کو کشمیر کے ایک رهائشي علاقہ میں دہشت گردوں کے چھپے ہونے کی اطلاع کے بعد سیکورٹی فورسیز نے انہیں پکڑنے کے لئے مہم چلائی تھی، گھر میں چھپے دہشت گردوں نے اچانک فائرنگ کر دی تھی، جس میں تین جوان شہید ہو گئے تھے، وہیں ایک اور انکاونٹر میں ایک نوجوان شہید ہو گیا۔

دہشت گردوں کے خلاف کارروائی میں رکاوٹ ڈالنے والوں کو بھی نہیں بخشا جائے گا : فوجی سربراہ

جنرل راوت نے کہا کہ جموں و کشمیر میں سیکورٹی فورسز کو زیادہ جانی نقصان اس لیے ہو رہا ہےکہ مقامی لوگ ان کی مہم میں رکاوٹ ڈالتے ہیں۔ یہی نہیں کئی مرتبہ دہشت گردوں کے فرار ہونے میں بھی وہ مدد کرتے ہیں۔ فوج کے سربراہ نے کہا کہ ہم مقامی آبادی پر زور دیں گے کہ جن لوگوں نے ہتھیار اٹھائے ہیں اور وہ مقامی لڑکے ہیں اور اگر وہ آئی ایس آئی ایس اور پاکستان کے پرچم لهراكر دہشت گردانہ سرگرمیوں کو انجام دیتے ہیں ، تو ہم ان کو ملک دشمن عناصر سمجھیں گے اور ان کے خلاف سخت کارروائی کریں گے۔ انہوں نے کہا کہ آج ہو سکتا ہے کہ وہ بچ جائیں ، لیکن کل ہم انہیں پکڑ ہی لیں گے۔ ہماری مہم جاری رہے گی۔

جنرل راوت نے کہا کہ جو لوگ دہشت گرد انہ سرگرمیوں کی حمایت کر رہے ہیں انہیں ایک موقع دیا جا رہا ہے ، لیکن اگر وہ نہیں مانیں ،تو سیکورٹی فورسز ان کے خلاف سخت کارروائی کریں گی۔ ہندواڑا اور بانڈی پورہ مہمات میں شہید جوانوں کو خراج عقیدت پیش کرنے کے بعد فوجی سربراہ نے نامہ نگاروں سے کہا کہ ہم ان کو ایک موقع دے رہے ہیں، اس کے باوجود اگر وہ دہشت گردوں کی مدد کرتے رہیں گے ، تو مہم چلائی جائے گی اور سخت قدم بھی اٹھا ئے جاسکتے ہیں۔

متعلقہ اسٹوریز

ری کمنڈیڈ اسٹوریز