مجلس عاملہ میں چھائے رہے نوٹوں کی منسوخی، سرجیکل اسٹرائک اور غریبوں کی بہبود کے موضوعات

Jan 07, 2017 10:59 PM IST | Updated on: Jan 07, 2017 10:59 PM IST

نئی دہلی۔  نوٹوں کی منسوخی کے تاریخی قدم کے بعد اور پانچ ریاستوں کے اسمبلی انتخابات سے پہلے بھارتیہ جنتا پارٹی (بی جے پی) کی آج یہاں اختتام پذیرہوئی دو روزہ قومی مجلس عاملہ کی میٹنگ میں نوٹوں کی منسوخی ، سرجیکل اسٹرائک اور غریبوں کی بہبود جیسے موضوعات حاوی رہے ۔ وزیر اعظم نریندر مودي کے ا ختتامی خطبہ کے ساتھ یہ اہم میٹنگ اختتام پذیر ہو گئی۔ مسٹر مودی نے اپنی تقریر میں یہ واضح کر دیا کہ بدعنوانی ختم کرکے غریبوں کا معیار زندگی بہتر بنانا ان کی حکومت کی ترجیح ہے۔ مسٹر مودی نے کہا کہ غریب ملک کے غریبوں نے نوٹوں کی منسوخی کے فیصلے کو قبول کیا ہے۔ انہوں نے سبھی پارٹیوں سے سیاسی اصلاحات اور انتخابی چندے میں شفافیت لانے کے لئے اتفاق رائے قائم کرنے کی اپیل بھی کی۔ میٹنگ میں سیاسی پارٹیوں سے انتخابی اصلاحات کے لئے آگے آنے اور لوک سبھا اور اسمبلی انتخابات ساتھ ساتھ کرانے پر اتفاق رائے قائم کرنے کی اپیل کی گئی۔ اس دوران پارٹی نے انتخابی اصلاحات سے متعلق دو کمیٹیاں بھی تشکیل دیں۔

بی جے پی صدر امت شاہ نے اپنے افتتاحی خطاب میں نوٹوں کی منسوخی اور سرجیکل اسٹرائک کو تاریخی اور جرات مندانہ قدم قرار دیا اور کہا کہ دونوں ہی معاملے میں اپوزیشن بے نقاب ہو گئی ہے۔ مودی حکومت کے کام کاج کی تعریف کرتے ہوئے انہوں نے کہا کہ وہ غریبوں کی فلاح و بہبود اور ملک كو آگے بڑھانے کے لئے مسلسل کام کر رہے ہیں۔ کانفرنس میں پانچ ریاستوں کے اسمبلی انتخابات کی حکمت عملی پر بھی غور کیا گیا اور کارکنوں کا بوتھ سطح پر مؤثر طریقے سے کام کرنے کا اعلان کیا گیا۔ کانفرنس میں سیاسی اور اقتصادی قراردادیں بھی منظور کی گئیں ۔ وزیر خزانہ ارون جیٹلی نے اقتصادی قرار داد اور مرکزی وزیر داخلہ راج ناتھ سنگھ نے سیاسی قرارداد پیش کی۔ سیاسی قرار داد میں کہا گیا کہ اگر پاکستان دہشت گردانہ حملے جاری رکھتا ہے تو سرجیکل اسٹرائک جیسی کارروائی پھر کی جا سکتی ہے۔ دہشت گردی کو قطعی برداشت نہیں کیا جائے گا۔ اپوزیشن جماعتوں پر سخت حملہ کرتے ہوئے کہا گیا کہ وہ جمہوریت اور عوام مخالف ہیں۔ کانگریس کی قیادت میں ان جماعتوں نے پارلیمنٹ کے سرمائی اجلاس میں بے وجہ رکاوٹ پیدا کی۔ اس میں مغربی بنگال کی ترنمول حکومت کو نشانہ بناتے ہوئے کہا گیا کہ وہاں بی جے پی کارکنوں پر حملے بڑھ رہے ہیں اور سیاسی جماعتوں کے لئے کام کاج کرنا مشکل ہو گیا ہے۔

مجلس عاملہ میں چھائے رہے نوٹوں کی منسوخی، سرجیکل اسٹرائک اور غریبوں کی بہبود کے موضوعات

اقتصادی قرارداد میں نوٹوں کی منسوخی اور کالے دھن پر حکومت کی کوششوں کو سراہا گیا اور اس کے لئے مودی کی تعریف کی گئی۔ کالے دھن پر قدم اٹھاکر حکومت نے اپنے انتخابی وعدے کو پورا کیا ہے۔ ان اقدامات سے بدعنوانی پر لگام لگانے میں مدد ملی ہے۔ مدھیہ پردیش کے وزیر اعلی شیوراج سنگھ چوہان نے کسانوں کی آمدنی دوگنی کرنے سے متعلق اپنا پریزنٹیشن دیاجبکہ بجلی کے مرکزی وزیر پیوش گوئل نے ڈیجیٹل معیشت کے فوائد پر تفصیل سے بحث کی ۔ پارٹی کے گڈ گورننس سیل نے اپنے پریزنٹیشن میں دعوی کیا کہ بی جے پی حکومت والی ریاستوں کی حکومتیں دیگر ریاستوں کے مقابلے بہتر کام کر رہی ہیں۔

متعلقہ اسٹوریز

ری کمنڈیڈ اسٹوریز