بی جے پی کا ہدف 2019 میں ساٹھ فیصد ووٹ حاصل کرنا ہے: کیشو پرساد موریہ

May 06, 2017 04:36 PM IST | Updated on: May 06, 2017 04:36 PM IST

لکھنؤ۔  اترپردیش اسمبلی انتخاب میں تقریبا 42 فیصد ووٹ حاصل کرکے تاریخی جیت درج کرنے والی بھارتیہ جنتا پارٹی (بی جے پی) نے 2019 کے لوک سبھا انتخابات میں کم از کم 60 فیصد ووٹ حاصل کرنے کا ہدف مقرر کیا ہے۔ بی جے پی کے ریاستی صدر اور ریاست کے نائب وزیر اعلی کیشو پرساد موریہ نے آج یہاں ’يو این آئی‘ سے کہا کہ پارٹی نے 2017 کے انتخابات میں 2014 دہرایا  ہے۔ اب پارٹی کے سامنے 2019 میں ہونے والا لوک سبھا الیکشن ہے۔ بی جے پی نے آئندہ لوک سبھا انتخابات میں ریاست سے 60 فیصد ووٹ حاصل کرنے کے لئے کمر کس لی ہے۔ وزیر اعظم نریندر مودی کی موثر قیادت اور بہترین تنظیمی صلاحیت والے پارٹی صدر امت شاہ کی قیادت میں پارٹی یہ ہدف حاصل کر لے گی۔ مسٹر موریہ نے کہا کہ پارٹی بوتھ سطح پراپنے آپ کو مضبوط کر رہی ہے۔ پنڈت دین دیال سالگرہ سال میں منعقد ہونے والے پروگراموں کے ذریعے ووٹروں کو اس پارٹی سے ملانے کا ہدف رکھا گیا ہے کہ 2019 کے انتخابات میں ریاست سے 60 فیصد ووٹ مل سکے۔

انہوں نے کہا کہ منصوبہ کے مطابق بیس ہزار سینئر کارکن اپنے اپنے بوتھوں پر رہیں گے۔ ایک سیکٹر میں کم از کم ایک سینئر کارکن کی موجودگی ضروری ہوگی۔ ایک سیکٹر میں اوسطاً دس بوتھ آئیں گے۔ مسٹر موریہ نے کہا کہ پارٹی نے سب کا ساتھ سب کاوکاس نعرے کے ساتھ کام کرنے کا فیصلہ کیا ہے۔ اس میں دلتوں اور پچھڑو ں کو خاص مواقع دیے جائیں گے۔ ان کا دعوی تھا کہ بی جے پی کا ہر کارکن پارٹی خاندان کا رکن ہے۔ سماج وادی پارٹی، بہوجن سماج پارٹی اور کانگریس کی طرح خاندان پارٹی پر راج نہیں کرتا بلکہ بی جے پی میں کارکنوں کا راج پارٹی پر چلتا ہے۔ محکمہ تعمیرات عامہ کے وزیر مسٹر موریہ نے کہا کہ 15 جون تک تمام سڑکیں گڈھوں سے پاک ہو جائیں گی۔ ریاست میں 58 شاہراوں کو تیار کرنے کے لئے ریاستی حکومت نے نو ابجیکشن سرٹیفکیٹ دے دیے ہیں تاکہ تمام پر کام شروع ہو سکے۔ تیرہ شاہراہوں کو قومی ہائی وے کے طور پر تبدیل کرنے کی تجویز مرکز کو بھیجی گئی ہے۔ محکمہ میں ای-ٹینڈرنگ شروع کر کے غنڈے، مافیاؤں کو ٹھیکیداری سے باہر کیا جائے گا۔

بی جے پی کا ہدف 2019 میں ساٹھ فیصد ووٹ حاصل کرنا ہے: کیشو پرساد موریہ

کیشو پرساد موریہ: فائل فوٹو

متعلقہ اسٹوریز

ری کمنڈیڈ اسٹوریز