ڈاکٹر کفیل کے گھر دبش دینے پہنچی پولیس، کپتان بولے اگر تعاون نہیں ملا تو کریں گے گرفتاری

Aug 29, 2017 02:27 PM IST | Updated on: Aug 29, 2017 02:27 PM IST

گورکھپور۔ گورکھپور میڈیکل کالج معاملہ میں ملزم بنائے گئے ڈاکٹر کفیل خان کی تلاش میں پیر کی دیر رات ایس ٹی ایف اور پولیس کی ٹیم نے ان کے گھر پر دبش دی۔ اس دوران وہ گھر پر نہیں تھے۔ ایس ایس پی نے دعویٰ کیا کہ اگر جانچ میں ڈاکٹر کفیل نے تعاون نہیں دیا تو ہمیں مجبوراً انہیں گرفتار کرنا پڑے گا۔

بتا دیں کہ سی او کینٹ کی قیادت میں تین ٹیمیں دیر رات بھاری پولیس دستہ کے ساتھ ڈاکٹر کفیل خان کے ترکمان پور اور راج گھاٹ واقع رہائش گاہ پر دبش دینے پہنچیں۔ یہاں پولیس کی ملاقات ڈاکٹر کفیل کی اہلیہ سے ہوئی۔ پولیس اہلکاروں نے صاف طور پر ان کی اہلیہ سے کہا کہ ڈاکٹر کفیل جانچ میں تعاون کریں اور اپنا موقف پیش کریں۔ لیکن وہ واقعہ کے بعد سے فرار چل رہے ہیں۔

ڈاکٹر کفیل کے گھر دبش دینے پہنچی پولیس، کپتان بولے اگر تعاون نہیں ملا تو کریں گے گرفتاری

ڈاکٹر کفیل خان کی فائل فوٹو

اس معاملہ میں نیوز ۱۸ سے بات چیت میں گورکھپور کے ایس ایس پی آر کے پانڈے نے بتایا کہ ہمارا مقصد گرفتاری کرنا نہیں ہے۔ ہم چاہتے ہیں کہ ڈاکٹر کفیل جانچ میں تعاون کریں لیکن اگر وہ جانچ میں تعاون نہیں کریں گے تو مجبورا ہمیں ان کو گرفتار کرنا پڑے گا۔

غور طلب ہے کہ بی آر ڈی میڈیکل کالج میں گزشتہ دنوں انسیفلائٹس وارڈ میں کئی بچوں کی موت ہو گئی تھی۔ معاملہ میں آکسیجن کی کمی سے بچوں کی اموات کا الزام لگا تھا جسے یوپی حکومت نے واضح طور پر مسترد کر دیا تھا۔

متعلقہ اسٹوریز

ری کمنڈیڈ اسٹوریز