بی ایس پی سپریمو مایا وتی کا بی جے پی پر نشانہ ، وندے ماترم کو سیاسی رنگ دینے کا لگایا الزام

Sep 11, 2017 11:08 PM IST | Updated on: Sep 11, 2017 11:08 PM IST

لکھنؤ: بہوجن سماج پارٹی (بی ایس پی) کی صدر مایاوتی نے بھارتیہ جنتا پارٹی (بی جے پی) پر قومی گیت وندےماترم پر سیاست کرنے کا الزام لگایا ۔ محترمہ مایاوتی نے آج یہاں کہا کہ پہلے تو بی جے پی کی طرف سے انتخابی مفاد کی تکمیل کے لیے 'وندےماترم کا استعمال کیا گیا اور اب اس کو اپنے ایک سیاسی نعرہ میں تبدیل کرنے کی کوشش کی جا رہی ہے جو بدقسمتی اور ملک کے لیے تشویش کی بات ہے۔ وزیر اعظم نریندر مودی کو 'وندےماترم کی مناسب عزت و احترام برقرار رکھنے کیلئے اس کے سیاسی استعمال کو فوری طور پر بند کرنا چاہئے۔

سوامی وویکانند کے شکاگو میں خطاب کے 125 سال کے موقع کی مناسبت سے وزیر اعظم نریندر مودی کے خطاب پر ردعمل کا اظہار کرتے ہوئے بی ایس پی صدر نے کہا کہ بی جے پی کے لیڈروں اور ان کی حکومتوں کے قول و فعل میں زمین و آسمان کا فرق ہے۔ اس لئے انہیں ملک کے عوام کو نصیحتیں کرنے کا کوئی اخلاقی حق نہیں ہے۔ ہزاروں نوجوانوں کو روزگار کی سخت ضرورت ہے اور یہ حکومت انہیں مسلسل یقین دہانی کے سوا کچھ نہیں دے پارہی ہے۔

بی ایس پی سپریمو مایا وتی کا بی جے پی پر نشانہ ، وندے ماترم کو سیاسی رنگ دینے کا لگایا الزام

بی ایس پی سربراہ مایاوتی: فائل فوٹو

انہوں نے کہا کہ ملک اور سماج حکومتوں کی اچھی پالیسی اور اچھے کاموں سے بنتا ہے ، نہ کہ خالی نصیحت اور جھوٹی سرکاری یقین دہانیوں سے۔ لہذا بی جے پی لیڈروں اور ان کی حکومتوں کو تکبر اور عوام مخالف رویہ چھوڑ کر صحیح معنوں میں مفاد عامہ اور عوامی فلاح کے لیے کام کرنا چاہیے۔ راشٹریہ سویم سیوک سنگھ (آر ایس ایس) کی تنگ ، نسل پرست اور فرقہ وارانہ سوچ اور طرز عمل کو ترک کر ملک کی تعمیر کا درست کام کرنا چاہیے، جو کہ اس حکومت میں دیکھنے کو نہیں مل رہا ہے۔

متعلقہ اسٹوریز

ری کمنڈیڈ اسٹوریز