الیکٹرانک ووٹنگ مشینوں سے 'چھیڑ چھاڑ' پر بہوجن سماج پارٹی کا یوم سیاہ

Apr 11, 2017 10:42 AM IST | Updated on: Apr 11, 2017 10:42 AM IST

لکھنئو۔ اتر پردیش اسمبلی انتخابات میں شکست سے دوچار بہوجن سماج پارٹی (بی ایس پی) کی سربراہ مایاوتی نے ای وی ایم کے ذریعہ دھوکہ دہی کا الزام لگایا تھا۔ اب اس مبینہ دھوکہ دہی کے خلاف پارٹی منگل کو ملک گیر یوم سیاہ منا رہی ہے۔ مظاہرہ کے دوران بی ایس پی کارکن بیلٹ پیپر سے الیکشن کرانے کا مطالبہ رکھیں گے۔ انتخابات میں شکست کے بعد ہی مایاوتی نے کہا تھا کہ 11 مارچ کو جمہوریت کا قتل کیا گیا ہے۔ لہذا ہر ماہ کی 11 تاریخ کو سیاہ دن کے طور پر منایا جائے گا۔

مایاوتی کے اس اعلان پر ملک بھر کے ریاستی ہیڈ کوارٹر اور ضلع ہیڈکوارٹر پر احتجاج کے ذریعے ای وی ایم کی جگہ بیلٹ پیپر سے الیکشن کرانے کا مطالبہ کیا جائے گا۔ مایاوتی کا الزام ہے کہ بی جے پی کو ملی جیت ای وی ایم سے چھیڑ چھاڑ کا نتیجہ ہے۔ ان کا کہنا ہے کہ ای وی ایم کو سیٹ کیا گیا، جس سے جو بھی ووٹ ان کا تھا وہ بی جے پی کو چلا گیا۔

الیکٹرانک ووٹنگ مشینوں سے 'چھیڑ چھاڑ' پر بہوجن سماج پارٹی کا یوم سیاہ

یہ پہلی بار ہوگا جب بی ایس پی کسی مسئلے کو لے کر سڑکوں پر اترے گی۔ سیاسی ماہرین کے مطابق انتخابات میں شکست کے بعد یہ احتجاج پارٹی کو متحد رکھنے کی قواعد کا ایک حصہ بھی ہے۔

متعلقہ اسٹوریز

ری کمنڈیڈ اسٹوریز