برہان وانی کی پہلی برسی : وادی کشمیر میں انٹرنیٹ خدمات بند ، ٹرین سروسز بھی معطل ، سخت سیکورٹی کا بندوبست

Jul 07, 2017 12:12 PM IST | Updated on: Jul 07, 2017 12:12 PM IST

سری نگر: وادی کشمیر میں حزب المجاہدین کے کمانڈر برہان مظفر وانی کی پہلی برسی کے پیش نظر انٹرنیٹ خدمات معطل کردی گئی ہیں۔ سرکاری ذرائع نے بتایا کہ یہ قدم ملک دشمن عناصر کی جانب سے انٹرنیٹ کا غلط استعمال روکنے کے لئے اٹھایا گیا ہے۔ وادی میں انٹرنیٹ خدمات کی معطلی کی وجہ سے مقامی باشندوں کے ساتھ ساتھ امرناتھ گپھا کے درشن کے لئے آنے والے یاتریوں کو بھی شدید مشکلات کا سامنا ہے۔ اس کے علاوہ الیکٹرانک بزنس اور بینکنگ نظام پوری طرح سے ٹھپ ہو کر رہ گیا ہے۔ وادی میں ہر طرح کی انٹرنیٹ خدمات بشمول سرکاری مواصلاتی کمپنی بی ایس این ایل کی براڈ بینڈ انٹرنیٹ خدمات گذشتہ رات تقریباً دس بجے منقطع کی گئیں۔

ذرائع نے بتایا کہ یہ خدمات غیرمعینہ مدت تک کے لئے معطل کی گئی ہیں۔ کشمیری علیحدگی پسند قادین سید علی گیلانی، میرواعظ مولوی عمر فاروق اور محمد یاسین ملک نے برہان وانی کی پہلی برسی کے سلسلے میں پہلے ہی ایک ہفتے تک جاری رہنے والا احتجاجی پروگرام جاری کیا ہے۔ پروگرام میں 7 سے 13 جولائی تک مختلف سرگرمیوں کا اعلان کرتے ہوئے 8 اور 13 جولائی کے دوران مکمل اور ریاست گیر ہڑتال کی کال دی گئی ہے۔

برہان وانی کی پہلی برسی : وادی کشمیر میں انٹرنیٹ خدمات بند ، ٹرین سروسز بھی معطل ، سخت سیکورٹی کا بندوبست

برہان وانی کو جو کشمیر میں جنگجوؤں کا پوسٹر بوائے کہلاتا تھا، گذشتہ برس 8 جولائی کو جنوبی ضلع اننت ناگ کے بمڈورہ ککرناگ میں ایک مختصر جھڑپ کے دوران اس کے دو ساتھیوں کے ساتھ ہلاک کیا گیا تھا ۔ برہان سوشل میڈیا پر متحرک ہونے کے سبب وادی بھر میں انتہائی مقبول تھا۔

سرکاری ذرائع نے بتایا کہ انٹرنیٹ خدمات کی معطلی کے حوالے سے انسپکٹر جنرل آف پولیس منیر احمد خان کی جانب سے جمعرات کو انٹرنیٹ خدمات فراہم کرنے والی کمپنیوں کے نام دو الگ الگ حکم نامے جاری کئے گئے۔ جہاں ایک حکم نامے میں مواصلاتی کمپنیوں کو انٹرنیٹ خدمات کلی طور پر منقطع کرنے کے لئے کہا گیا وہیں دوسرے حکم نامے میں تمام لیز لائن انٹرنیٹ سروس پرووائڈرس کو تمام سوشل میڈیا ویب سائٹس بلاک کرنے کے لئے کہا گیا۔

تاہم ظاہری طور پر سوشل میڈیا کو بلاک کرنے میں ناکام ہونے کے بعد بی ایس این ایل نے براڈبینڈ انٹرنیٹ خدمات کو کلی طور پر معطل کردیا۔ انٹرنیٹ خدمات بند ہوجانے کی وجہ سے صارفین خاص طور پر صحافیوں، طلباء، سیاحوں اور تاجروں کو زبردست مشکلات کا سامنا کرنا پڑرہا ہے۔ خدمات کی معطلی کے باعث مختلف مقامی اور قومی میڈیا اداروں سے وابستہ میڈیا اہلکار اپنی رپورٹیں متعلقہ اداروں تک نہیں پہنچا پارہے ہیں اور نتیجے میں اِن کی معمول کی سرگرمیاں بری طرح سے متاثر ہوکر رہ گئی ہیں۔ اس کے ساتھ ساتھ امرناتھ گپھا کی درشن کے لئے آنے والے یاتریوں کو بھی شدید مشکلات کا سامنا کرنا پڑرہا ہے۔

ادھر وادی کشمیر میں ریل خدمات جمعہ کو ایک بار پھر معطل کردی گئیں۔ یہ خدمات علیحدگی پسند قیادت کی طرف سے جاری کردہ احتجاجی پروگرام کے پیش نظر معطل کردی گئی ہیں۔ ریلوے کے ایک عہدیدار نے بتایا کہ ہم نے سیکورٹی وجوہات کی بناء پر آج تمام ٹرینوں کی آمدورفت معطل کردی ہے ۔ انہوں نے بتایا کہ وسطی کشمیر کے بڈگام اور شمالی کشمیر کے بارہمولہ کے درمیان چلنے والی تمام ٹرینوں کو معطل کیا گیا ہے ۔ انہوں نے بتایا کہ اسی طرح گرمائی دارالحکومت سری نگر اور جموں خطہ کے بانہال کے درمیان براستہ جنوبی کشمیر تمام ٹرینیں منسوخ کی گئی ہیں۔

متعلقہ اسٹوریز

ری کمنڈیڈ اسٹوریز