اترپردیش : سنی اورشیعہ وقف بورڈ کی جانچ سی اے جی کے سپرد ، جلد ہی انکوائری شروع ہونے کا امکان

Jul 06, 2017 11:38 PM IST | Updated on: Jul 06, 2017 11:38 PM IST

لکھنؤ: اترپردیش کی یوگی آدتیہ ناتھ حکومت نے سنی اور شیعہ وقف بورڈ کی تحقیقات ملک کے آڈیٹر اور کمپٹرولر جنرل (سی اے جی) سے کرانے کا فیصلہ کیا ہے۔ ریاست کے اوقاف اور اقلیتی بہبود کے وزیر مملکت محسن رضا نے آج یہ اطلاع دی۔ مسٹر محسن رضا نے بتایا کہ سی اے جی نے جانچ کرنے کی منظوری دے دی ہے۔ انکوائری جلد ہی شروع ہونے کا امکان ہے۔

شیعہ اور سنی دونوں وقف بورڈوں پر اکھلیش یادو حکومت کے قدآور وزیر محمد اعظم خاں کے حامیوں کا قبضہ رہا ہے۔ حکومت تبدیل ہونے کے بعد یوگی آدتیہ ناتھ حکومت نے وقف بورڈوں میں مبینہ بدعنوانی کی شکایات کی تحقیقات شروع کرنے کا حکم دیا تھا۔ اس سلسلے میں مسٹر محسن رضا اور دونوں بورڈوں کے عہدیداروں کے درمیان کافی کشیدگی جارہی ہے۔

اترپردیش : سنی اورشیعہ وقف بورڈ کی جانچ سی اے جی کے سپرد ، جلد ہی انکوائری شروع ہونے کا امکان

دریں اثناء، یوگی حکومت نے شیعہ وقف بورڈ کے چھ اراکین کو برخاست کر دیا تھا لیکن انہیں الہ آباد ہائی کورٹ کی لکھنؤ بنچ کی طرف سے حکم امتناع کے ذریعہ بحال کردیا گيا ہے۔ دونوں وقف بورڈوں کی تحقیقات سی اے جی کے ذریعہ کئے جانے کی آہٹ سے ہی اقلیتوں کی سیاست کرنے والوں میں افراتفری مچ گئي ہے۔

متعلقہ اسٹوریز

ری کمنڈیڈ اسٹوریز