رشوت خوری کے الزام میں سی بی آئی نے فوج کے کرنل سمیت چارافراد کوکیا گرفتار

Jun 18, 2017 10:44 PM IST | Updated on: Jun 18, 2017 10:44 PM IST

نئی دہلی : مرکزی تفتیشی بیورو (سی بی آئی)نے رشوت خوری کے معاملے میں فوج کے ایک کرنل اور پونے کی ایک پرائیویٹ کمپنی کے تین دیگر افراد کو گرفتار کیا ہے۔ سی بی آئی ذرائع نے آج یہاں بتایا کہ جانچ ایجنسی نے فوج کی پلاننگ اور انجینئرنگ برانچ کے کرنل شیوال کمار کے علاوہ گذشتہ 17 جون کو پونے کے میسرز ایکسٹیک اکیوپمنٹ پرائیویٹ لمیٹڈ کے منیجنگ ڈائریکٹر شرت ناتھ، ڈائریکٹر وجے نائیڈو اور امت رائے اور کمپنی کے کولکاتا واقع نمائندے کے خلاف معاملہ درج کیا تھا۔

کرنل کمار پر الزام تھا کہ انہوں نے فوج میں استعمال ہونے والی ایک مشین کی فراہمی کو منظوری دینے کے بدلے میں ایک لاکھ 80 ہزار روپے کی رشوت کا مطالبہ کمپنی کے منیجنگ ڈائریکٹر سے کیا تھا۔ کرنل کو رشوت کی پیشگی قسط کے طور پر 50 ہزار روپے گزشتہ فروری میں مل گئی تھی، لیکن وہ باقی رقم کے لئے کمپنی کے عہدیداروں پر دباؤ بنا رہا تھا۔ سی بی آئی نے جال بچھا کر کرنل اور تین دیگر افراد کو اس وقت گرفتار کیا جب رشوت کی بقیہ رقم کرنل کمار کو دی جا رہی تھی۔

رشوت خوری کے الزام میں سی بی آئی نے فوج کے کرنل سمیت چارافراد کوکیا گرفتار

جانچ ایجنسی نے ان سب کے خلاف تعزیرات ہند کی دفعہ 120 بی اور اینٹی کرپشن قانون 1988 کی  دفعہ سات، 12، 13 (2)، 13 (1) (ڈی) کے تحت مقدمہ درج کیا تھا۔  اس سلسلے میں پونے کے چار اور کولکاتہ کے دو ٹھکانوں پر چھاپہ ماری کی جا رہی ہے۔

متعلقہ اسٹوریز

ری کمنڈیڈ اسٹوریز