پردیومن قتل معاملہ میں اسکول کا طالب علم گرفتار، تین دن کی حراست میں

Nov 08, 2017 08:44 PM IST | Updated on: Nov 08, 2017 08:44 PM IST

نئی دہلی۔  ہریانہ میں گروگرام کے ریان اسکول کے طالب علم پردیومن قتل معاملہ میں مرکزی تفتیشی بیورو (سی بی آئی) نے اسی اسکول کے گیارہیوں کلاس کے طالب علم کو گرفتار کرلیا اور بعد میں آج عدالت نے تفتیسی ایجنسی کو اس سے تین دن پوچھ گچھ کرنے کی اجازت دے دی۔ سی بی آئی نے ثبوتوں کی بنیاد پر ملزم طالب علم کو کل دیر رات حراست میں لیکر پوچھ گچھ شروع کی تھی۔ سی بی آئی ترجمان ابھیشیک دیال نے آج یہاں بتایا کہ اس قتل معاملہ میں جائے وقوع کی صورتحال، فورنسک جائزہ، سی سی ٹی وی فوٹیج اور کال ریکارڈ کی جانچ جیسے سائنٹفک ثبوتوں کی بنیاد پر ملزم طالب علم کو گرفتار کیا گیا۔ ملزم طالب علم نے امتحان اور پی ٹی ایم میٹنگ ٹالنے کے لئے پردیومن کو قتل کیا تھا۔ سی بی آئی نے اس معاملے میں پہلے گرفتار بس کنڈکٹر اشوک کمار کو بھی ابھی کلین چٹ نہیں دی ہے۔

ملزم طالب علم کو آج عدالت کے سامنے پیش کیا گیا۔ جہاں سی بی آئی نے اسے چھ دن کی حراست میں دینے کی درخواست کی لیکن عدالت نے تفتیشی ایجنسی کو اس سے تین دن پوچھ گچھ کرنے کی اجازت دی۔ عدالت نے رولنگ دی کہ سی بی آئی طالب علم سے صبح دس بجے سے شام چھ بجے تک ہی پوچھ گچھ کرسکتی ہے۔ پوچھ گچھ کے بعد ملزم طالب علم کو بچوں کی اصلاح گھر میں رکھا جائے گا۔ پوچھ گچھ کے دوران بچوں کے گھر کی ایک خاتون ملازم بھی ملزم کے ساتھ موجود رہے گی۔قانون کے مطابق پوچھ گچھ کے دوران خاتون کی موجودگی ضروری ہے۔

پردیومن قتل معاملہ میں اسکول کا طالب علم گرفتار، تین دن کی حراست میں

قابل ذکر ہے کہ پردیمن کا قتل آٹھ ستمبر کوصبح 8 بجے کے قریب اسکول کے باتھ روم میں کردیا گیا تھا۔

خیال رہے کہ گروگرام کے ریان انٹرنیشنل اسکول میں دوسری کلاس میں زیرتعلیم سات سالہ طالب علم پردیومن ٹھاکر کو آٹھ ستمبر کو گلا ریت کر قتل کردیا گیا تھا۔ اس معاملہ میں بس کنڈکٹر اشوک سمیت تین لوگوں کو پولیس نے گرفتار کیا تھا۔

متعلقہ اسٹوریز

ری کمنڈیڈ اسٹوریز