لاکھوں طلبہ کے مستقبل کا سوال ، ماڈریشن پالیسیی کے تحت ہی نتائج کے اعلان کی امید

May 26, 2017 09:39 AM IST | Updated on: May 26, 2017 09:40 AM IST

نئی دہلی : ماڈریشن پالیسی کے تنازع  کی وجہ سے سی بی ایس ای بورڈ کے نتائج میں تاخیر ہو رہی ہے ۔ جہاں سی بی ایس ای نے ماڈریشن پالیسی ختم کرنے کا فیصلہ کیا تھا ، وہیں ہائی کورٹ نے پالیسی بحال رکھنے کا فیصلہ سنایا ہے ۔ ایسے میں سپریم کورٹ جانے کی قیاس آرائی کے باوجود اس پالیسی کے تحت ہی امتحان کے نتائج آنے کی توقع ظاہر کی جا رہی ہے ۔

والدین کی اپیل پر ہائی کورٹ میں مفاد عامہ کی عرضی داخل کرنے والے ایڈوکیٹ آشیش ورما کا کہنا ہے کہ ہائی کورٹ کا یہ بہت اچھا فیصلہ آیا ہے ۔ بیس لاکھ بچوں کی زندگی اس سے وابستہ ہے ۔ اگر سی بی ایس ای ہائی کورٹ کے حکم کو سپریم کورٹ میں چیلنج کرتا ہے ، تو سب سے بڑا سوال یہی ہے کہ اس کی بنیاد کیا ہو گی  ۔

لاکھوں طلبہ کے مستقبل کا سوال ، ماڈریشن پالیسیی کے تحت ہی نتائج کے اعلان کی امید

انہوں نے کہا کہ سی بی ایس ای کے لئے ہائی کورٹ کے حکم کے خلاف جاکر ماڈریشن پالیسی کو ختم کر کے نتائج کا اعلان کرنا بھی ممکن نہیں ہیں ۔ ابھی سپریم کورٹ کی چھٹیاں چل رہی ہیں ۔ ایسے میں موسم گرما بنچ کے سامنے سی بی ایس ای کو اپیل کرنی ہوگی ۔

ورما نے کہا کہ یہ سپریم کورٹ کا اپنا موقف ہوگا ۔ لیکن ہائی کورٹ کے اتنے اہم حکم کے بعد امکان ہے کہ کورٹ عرضی منسوخ کر دے ۔ یہاں کوئی بھی فیصلہ لینے سے پہلے بیس لاکھ طلبہ کے نتائج اور مستقبل کے بارے میں سوچا جائے گا ۔

غور طلب ہے کہ سپریم کورٹ میں ہائی کورٹ کے حکم کو چیلنج کرنے کے معاملے پر سی بی ایس ای کی جانب سے ابھی تک کوئی سرکاری بیان نہیں آیا ہے ۔ وہیں سی بی ایس ای کی پی آر او ریما شرما نے سپریم کورٹ سے متعلق قیاس آرائیوں کو مسترد کرتے ہوئے کہا کہ جو بھی ہوگا سامنے آ جائے گا ۔

متعلقہ اسٹوریز

ری کمنڈیڈ اسٹوریز