ہندوستانی شطرنج اسٹار نے ایرانی ٹورنامنٹ سے خود کو کیا الگ، حجاب پہننے سے انکار

ہندوستان کی شطرنج کھلاڑی سومیا سوامی ناتھن نے اگلے مہینے ایران میں ہونے والے شطرنج ٹورنامنٹ سے خود کو باہر کر لیا ہے۔

Jun 13, 2018 10:31 AM IST | Updated on: Jun 13, 2018 10:33 AM IST

ہندوستان کی شطرنج کھلاڑی سومیا سوامی ناتھن نے اگلے مہینے ایران میں ہونے والے شطرنج ٹورنامنٹ سے خود کو باہر کر لیا ہے۔ سومیا نے مسلم ملک ایران میں حجاب پہننے کی لازمیت کی مخالفت کرتے ہوئے یہ فیصلہ لیا ہے۔ فیس بک پر پوسٹ کرتے ہوئے چیس اسٹار سومیا نے لکھا کہ حجاب پہننے کی زبردستی اس کے انسانی حقوق کی خلاف ورزی ہے۔ ساتھ ہی سومیا نے اسے اپنی آزادی اور مذہب کے حق کی توہین سے بھی تعبیر کیا۔

یہ شطرنج ٹورنامنٹ 26 جولائی سے 4 اگست تک ایران میں منعقد ہونے جا رہا ہے۔ سومیا نے اپنی فیس بک پوسٹ پر لکھا "مجھے زبردستی حجاب پہننے کے لئے مجبور نہیں کیا جانا چاہئے، ایسا کرنا میرے انسانی حقوق کی خلاف ورزی ہے۔ اس کے ساتھ ہی میرے بولنے، سوچنے اور مذہب کو ماننے کے حقوق کی بھی خلاف ورزی ہے۔

ہندوستانی شطرنج اسٹار نے ایرانی ٹورنامنٹ سے خود کو کیا الگ، حجاب پہننے سے انکار

سومیا سوامی ناتھن: تصویر فیس بک سے

Loading...

سومیا نے کہا کہ سرکاری چیمپئن شپ کا انعقاد کرتے ہوئے کھلاڑیوں کے حقوق پر بہت کم توجہ دی جاتی ہے۔

سومیا نے کہا "میں سمجھ سکتی ہوں کہ آرگنائزر چاہتے ہیں کہ کھلاڑی کسی بھی چیمپئن شپ میں اپنے ملک کی باقاعدہ یونیفارم کے ساتھ ہی ملک کی نمائندگی کریں، لیکن اس طرح سے کسی مذہب سے جڑے کپڑے کو زبردستی پہنانے کا کوئی ضابطہ نہیں ہے۔

سومیا نے بتایا کہ انہیں اتنے اہم ٹورنامنٹ میں حصہ نہ لے پانے کا بہت دکھ ہے۔ انہوں نے کہا کہ کچھ چیزوں کے لئے سمجھوتہ نہیں کرنا چاہئے۔

یہ پہلی بار نہیں ہے جب کوئی خاتون کھلاڑی ایران میں ہونے والے ٹورنامنٹ سے حجاب پہننے کی مجبوری کی وجہ سے باہر نکلی ہو۔ اس سے پہلے بھی 2016 میں ہندوستان کی پستول شوٹر حنا سندھو نے ایران میں ہونے والے ایشین ایئرگن شوٹنگ چیمپئن شپ سے خود کو الگ کر لیا تھا۔

Loading...

متعلقہ اسٹوریز

ری کمنڈیڈ اسٹوریز