جعلی پاسپورٹ کیس: چھوٹا راجن اور تین دیگر ملزمان کو سات سال قید کی سزا

Apr 25, 2017 06:55 PM IST | Updated on: Apr 25, 2017 06:55 PM IST

نئی دہلی۔ مرکزی تفتیشی بیورو (سی بی آئی) کی خصوصی عدالت نے گینگسٹر راجندر سداشیو عرف چھوٹا راجن اور بنگلور پاسپورٹ آفس کے تین ریٹائرڈ افسران کو جعلی پاسپورٹ کیس میں سات سال قید کی سزا سنائی ہے۔ پٹیالہ ہاؤس کورٹ کے خصوصی جج ویریندر کمار گوئل نے آج تعزیرات ہند (آئی پی سی) کی دفعات 420، 471، 468، 467، 419 اور 120 (بی) کے تحت چلائے گئے مقدموں میں یہ سزا سنائی ہے۔ یہ پہلا موقع ہے جب چھوٹا راجن کو ملک میں کسی مقدمے میں سزا سنائی گئی ہے۔ چھوٹا راجن کے علاوہ جےشري دتاتریہ ، دیپک نٹور لال اور للتا لكشمن کو سزا سنائی گئی ہے۔ان تینوں کو کل مجرم قرار دیئے جانے کے بعد حراست میں لے لیا گیا تھا۔

مسٹر گوئل نے کل چاروں کو مجرم ٹھہرایا تھا۔ اس معاملے میں آج سزا سناتے ہوئے جج نے انڈر ورلڈ ڈان چھوٹا راجن اور پاسپورٹ آفس کے تین ریٹائرڈ افسران کو جعلی پاسپورٹ کے کیس میں سات سال قید کی سزا سنائی اور قصورواروں پر 15-15 ہزار روپے کا جرمانہ بھی عائد کیا ۔ چھوٹا راجن پر ملک میں 70 سے زائد مقدمات چل رہے ہیں۔ 54 سالہ چھوٹا راجن کو جب گرفتار کیا گیا تھا تب اس کے پاس جعلی پاسپورٹ بھی برآمد کیا گیا تھا، جسے بنگلور میں واقع پاسپورٹ آفس سے ہی بنایا گیا تھا۔ چھوٹا راجن کو نومبر 2015 میں بالی سے گرفتار کیا گیا تھا۔ اس کے بعد اسے حوالگی کے ذریعہ دہلی لایا گیا تھا۔ چھوٹا راجن فی الحال دہلی کی تہاڑ جیل میں بند ہے۔ اس کے خلاف فرضی پاسپورٹ کے ذریعے 2003 میں ہندوستان سے آسٹریلیا فرار ہونے کا الزام ہے۔ سی بی آئی نے اس کے خلاف پہلی چارج شیٹ گزشتہ سال داخل کی تھی ، جس میں چھوٹا راجن کے علاوہ تینوں سابق حکام کو بھی شامل کیا گیا تھا۔

جعلی پاسپورٹ کیس: چھوٹا راجن اور تین دیگر ملزمان کو سات سال قید کی سزا

چھوٹا راجن، فائل فوٹو: تصویر ٹوئیٹر

عدالت نے سی بی آئی اور مدعا علیہان کی آخری دلیلیں سننے کے باوجود 28 مارچ کو فیصلہ محفوظ رکھ لیا تھا۔ سی بی آئی کا الزام تھا کہ چھوٹا راجن نے مجرم پاسپورٹ حکام کے ساتھ سازباز کرکے 1998-99 میں موہن کمار کے نام سے پاسپورٹ بنوایا تھا۔

متعلقہ اسٹوریز

ری کمنڈیڈ اسٹوریز